اقلیتوں کے حقوق اور انکے تحفظ کیلئے صوبوں کو یاددہانی مراسلے ارسال

09 دسمبر 2014

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) اٹارنی جنرل آف پاکستان نے اقلیتوں کے حقوق اور انہیں تحفظ فراہم کرنے سے متعلق چاروں صوبوں کو عدالتی احکامات پر عملدرآمد کرنے کے لئے یاددہانی کے مراسلے (ریمائنڈرز لیٹرز) جاری کردیئے ہیں۔ سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کی سربراہی میں قائم تین رکنی بنچ نے اقلیتوں کے حقوق اور تحفظ فراہمی سے متعلق ازخود نوٹس کیس کا فیصلہ دیا تھا کی اس حوالے سے ایک سپیشل ٹاسک فورس بنائی جائے، اقلیتوں کے حقوق کی فراہمی کا بندوبست کرنے، ان کے مقدس مقامات کی حفاظت کرنے کی ہدایت کی تھی۔ انہوں یہ احکامات پشاور چرچ دھماکہ، کیلاش مذہب تبدیلی دھمکیوں، سندھ میں مندر میں آتشزدگی اور ہلاکتوں سے متعلق متفرق مقدمات کے مشترکہ فیصلہ میں جاری کی تھیں۔ اٹارنی جنرل آفس کے ذرائع کے مطابق عدالت احکامات کی روشنی میں اگر اقدامات اٹھائے جاتے تو ’’کوٹ رادھا کشن‘‘ ایسے واقعات رونما نہ ہوتے واقعہ میں ایک اقلیتی جوڑے کو زندہ جلادیا گیا تھا جس پر سپریم کورٹ کے انسانی حقوق کے توسط سے چیف جسٹس نے مذکورہ معاملے پر رپورٹ طلب کی ۔جس کی روشنی میں اٹارنی جنرل نے پیش رفت شروع کی ہے۔

آئین سے زیادتی

چلو ایک دن آئین سے سنگین زیادتی کے ملزم کو بھی چار بار نہیں تو ایک بار سزائے ...