حکومت سپورٹ کرے تو پاور لفٹنگ میں میڈلز جیت سکتے ہیں : راشد ملک

09 دسمبر 2014

لاہور (سپورٹس رپورٹر) پاکستان پاور لفٹنگ فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل راشد ملک نے کہا ہے کہ حکومت اس کھیل کی مکمل سپورٹ کرے تو ایشیا اور ورلڈ میں میڈل آسانی سے حاصل کئے جا سکتے ہیں۔ پاکستان میں اس کھیل کا بہت زیادہ ٹیلنٹ موجود ہے۔ بدقسمتی سے فنڈز نہ ہونے کی وجہ سے بین الاقوامی مقابلوں میں زیادہ کھلاڑیوں کی شرکت کو یقینی نہیں بناپا رہے ہیں۔ پاکستان سپورٹس بورڈ سے الحاق کیلئے درخواست دے رکھی ہے۔ خواتین کے پاور لفٹنگ مقابلوں کا آغاز کر دیا ہے۔ عدیل رانا نے ڈیڈلفٹ میں 270 کلوگرام وزن اٹھا کر ورلڈ ریکارڈ بنا رکھا ہے جو آج بھی پاکستان کے نام ہے۔
 100 کلوگرام میں پاکستان کے محمد عمران خالد نے ایشین چیمپئن شپ میں عالمی ریکارڈ اپنے نام کر رکھا ہے جبکہ 2005ءکی کامن ویلتھ پاور لفٹنگ چیمپئن شپ میں مخدود وسائل ہونے کی وجہ سے بین الاقوامی مقابلوں میں پاکستان کی مکمل ٹیم کو نہیں بھجوایا جا سکتا ہے۔ رواں ماہ آسٹریلیا میں منعقد ہونیوالی ایشین اوشیانا پاور لفٹنگ چیمپئن شپ میں اطہر کامران بٹ اور عبدالجبار عدنان پاکستان کی نمائندگی کر رہے ہیں۔ امید ہے کہ دونوں کھلاڑی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے میڈل پاکستان کے نام کریں گے۔ پاکستان میں اس کھیل کا نوجوانوں میں بہت زیادہ شوق پایا جاتا ہے۔ ملک بھر میں زیادہ تر نوجوان اپنی فزیکل فٹنس کو بہتر بنانے کیلئے پاور لفٹنگ کو اپناتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان واپڈا سے تعلق رکھنے والے عاصم شہزاد سے بہت زیادہ توقعات وابستہ ہیں۔ انشااللہ اگلی ایشین پاور لفٹنگ چیمپئن شپ میں وہ ملک کیلئے میڈل جیت کر لائے گا۔