جماعت اسلامی کی مجلس شوریٰ میں مہنگائی کیخلاف قرارداد

09 دسمبر 2013

کراچی (نیوز رپورٹر)جماعت اسلامی سندھ نے ملک میں دن بدن بڑھتی ہوئی مہنگائی وبدامنی پر گھری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت مہنگائی کے جن کو بوتل میں بند کرکے قیمتوں پر کنٹرول اور قیام امن سمیت انتخابات میں قوم سے کئے گئے وعدوں پر عمل کرے ۔ یہ بات جماعت اسلامی سندھ کی مجلس شوریٰ کے اجلاس میں منظور ہونی والی ایک قرارداد میں کی گئی جو کہ قباءآڈیٹوریم میں صوبائی امیر ڈاکٹر معراج الہدیٰ کی زیرصدارت منعقد ہوا۔ قرارداد میں مزید کہا گیا کہ بدقسمتی سے 65سال گذرجانے کے باوجود قیام پاکستان کے مقاصد کو پورا نہیں کیا گیا بالخصوص ملک کی معاشی صورتحال، سودی معیشت اور عالمی مالیاتی اداروں کے قرضوں پر انحصار نے ملک کی معشیت ہی نہیں ملک کی سلامتی وخودمختاری کو بھی داﺅ پر لگادیا ہے ۔ جس کی وجہ سے ملک میں سرمایہ کاری کا عمل نہ صرف رک گیا ہے بلکہ سرمایہ کار اپنا سرمایہ بیرون ملک منتقل کررہے ہیں۔ غذائی اجناس، آٹا، چاول اور دالوں کے نرخوں میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے حتیٰ کہ آلو پیاز ٹماٹر سمیت سبزیوں کی قیمت بھی آسمان سے باتیں کررہی ہیں۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت اور قیادت نے انتخابات میں غریب کی غربت اور مہنگائی ختم کرنے کے دعوے کئے تھے لیکن حکومت وقت کی کارکردگی صفر ہے اور ہر نیا دن مظلوم اور غریب عوام کیلئے پریشانی لیکر طلوع ہوتا ہے۔ پیپلزپارٹی ومسلم لیگ کی پالیسیاں اور اعمال ایک ہی جیسے ہیں دونوں کا مقصد بھی عوام کا کچومر نکالنا ہے۔ بدامنی کی وجہ سے عام آدمی عدم تحفظ کا شکار ہے ،حکومت اور قانون نام کی کوئی چیز نظر نہیں آتی۔ سودی معیشت اور عالمی مالیاتی اداروں کے چنگل سے نکلنے کیلئے مو¿ثر تدابیر کی جسارت کی جائے اور بیرون قرضوں پر انحصار ختم کیا جائے۔