وزیراعلیٰ پنجاب سے اپیل

09 دسمبر 2013

مکرمی! خادم اعلیٰ، پنجاب میاں محمد شہبازشریف کے علم میں یہ بات لانا ضروری ہے کہ نجی تعلیم اداروں کے ساتھ ناروا سلوک کی پالیسی تاحال جاری ہے۔ ٹیکسوں کے بوجھ، مہنگی بجلی، قیمتی کتابوں سے ستائے ہوئے تعلیمی ادارے اپنی مدد آپ کے تحت تعلیم عام کرنے میں کوشاں ہیں، حد تو یہ ہے کہ گزشتہ 35 سال سے اپنی مدد آپ کے تحت فروغ تعلیم کیلئے کام کرنے والے ادارے جس کی بنیاد نظریاتی افراد نے قائداعظم کے افکار کی روشنی میں رکھی گئی کو رواں برس سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کی طرف سے ’’صفائی فیس‘‘ کے نام پر دھمکی آمیز نوٹس جاری کیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں بار ہا مقامی انتظامیہ کو تحریری طور پر بھی مطلع کیا گیا مگر ہر سال مبلغ 600 روپے ویسٹ مینجمنٹ کمپنی صفائی ٹیکس وصول کرنے پہنچ جاتی ہے اور زبانی کلامی صفائی کی یقین دہانی کراتی ہے، رواں برس تین دن کے نوٹس کے ساتھ سو فیصد اضافہ شامل کرکے صفائی ٹیکس کی وصولی کی مہم کا آغاز کر دیا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب سے درخواست ہے کہ مذکورہ افسران کی ذاتی توجہ کا متمنی ہے۔ صفائی ٹیکس میں نہ صرف یہ سو فیصد اضافہ واپس لیا جائے بلکہ صفائی کی بہتر سہولیات بہم پہنچانے کی بھی مانیٹرنگ کی جائے تاکہ حکومت کا تعاون نجی تعلیمی اداروں کے ساتھ یقینی ہو سکے۔(عدنان رفیق عالم 129 نسبت روڈ لاہور)