’’پنگا‘‘ لے کوئی اور ٹیکس ہمارا خرچ! آخر کیوں

09 دسمبر 2013

مکرمی! کبھی سیاسی پارٹیاں اور کبھی مذہبی جماعتیں اور گروہ اپنا ’’شو آف‘‘ کرنے کے لئے مظاہرے کرتی ہیں اور ان کی حفاظت کے لئے سینکڑوں پولیس / رینجرز کے اہلکار اور کبھی کبھی مسلح افواج کے دستے بھی تعینات کرنے پڑتے ہیں۔ مستزاد یہ کہ نگرانی اور نگہبانی پر کبھی کبھی ہیلی کوپٹر بھی چلانا پڑتے ہیں جیسا کہ حالیہ محرم کے جلوسوں پر کرنا پڑا۔ اس سب انتظام پر ہمارے ٹیکس کا پیسہ خرچ ہوتا ہے۔ کیا ہم اپنے خون پسینے کی کمائی کو ان کاموں کیلئے دیتے ہیں یا اپنی اور عوام کی فلاح و بہبود کے کاموں پر خرچ کرنے کیلئے دیتے ہیں؟ طرفہ یہ کہ عوام کو مشکلات سے دوچارکرنے کیلئے گزرگاہیں بھی مسدود کر دی جاتی ہیں۔ اس لئے حکومت سے گذارش ہے کہ پورے ملک میں ہر قسم کے جلسے جلوسوں پر پابندی لگائی جائے اور ان کو چار دیواری کے اندر مجبور کر کے عوامی گزرگاہوں کو ان کی ’’کرم نوازی‘‘ سے بچائے۔ (میاں محمد رمضان)