پاکستان اور چین کے درمیان باہمی تعاون کے مزید انیس معاہدوں پر دستخط ہو گئے ہیں ۔ چین توانائی کے شعبے میں چار ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا

08 نومبر 2014 (18:36)

دورہ چین میں وزیراعظم نواز شریف کی اہم شخصیات سے ملاقاتوں کا سلسلہ جاری ہے ۔ ہفتے کو محمد نواز شریف نے چینی وزیراعظم، بینکار اور صنعت کاروں سمیت اہم شخصیات سے ملاقاتیں کیں ۔ انہوں نے چین کے ایشین انفرا سٹرکچر ڈویلپمنٹ بینک کے سربراہ  سے ملاقات کی ۔ بینک پاکستان میں توانائی کے مختلف شعبوں ،شاہراہ قراقرم کی تزئین،گوادر پورٹ سمیت کئی  منصوبوں میں سرمایہ کا ری کرے گا ۔اس سے پہلے وزیراعظم نے ایک تقریب میں شرکت کی ۔ جس میں پاکستان اور چین کے درمیان توانائی سمیت  دیگر شعبوں میں تعاون کے متعدد معاہدوں پر دستخط  کیے ۔ مہعاہدے کے تحت پاکستان کو ساڑھے سولہ ہزار میگاواٹ سے زائد  بجلی حاصل ہوگی۔ معاہدوں میں اقتصادی اور فنی تعاون سمیت بہاولپورمیں قائداعظم سولرپارک میں شمسی توانائی پیدا کرنے، ساہیوال میں کوئلےسے ایک ہزار تین سو بیس میگا واٹ بجلی ،سکھی کنارے پانی سے آٹھ سو ستر میگاواٹ اور جھمپیرمیں ہوا سے سو  میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کا  معاہدہ بھی شامل ہے۔دونوں ممالک کے درمیان  تھر سے پینسٹھ  لاکھ میٹرک ٹن کوئلہ نکالنے کا معاہدہ بھی طے پایا