چین سے دوستی رواں دواں ہے‘ ترقیاتی عمل کو نقصان پہنچانے کے خواہشمند ناکام ہو گئے: شہباز شریف

08 نومبر 2014

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ وزیراعظم محمد نواز شریف کی قیادت میں پاکستان اور چین کے درمیان تعلقات کے ایک نئے دور کا آغاز ہوچکا ہے۔ موجودہ دورئہ چین غیر معمولی اہمیت کا حامل ہے اور اس دورے کے دوران چین کے ساتھ توانائی اور انفرا سٹرکچر کے شعبوں سے متعلق اہم منصوبوں پر دستخط ہوں گے۔ پاکستانی عوام کی ترقی و خوشحالی کے مخالفین کی رکاوٹوں کے باوجود پاک چین دوستی کا کارواں رواں دواں رہے گا۔ چین کے تعاون سے پاکستان میں ترقیاتی عمل کو نقصان پہنچانے کے خواہش مندوں کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز بیجنگ پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم محمد نواز شریف کے دورئہ چین سے دونوں ملکوں کے مابین تعاون کی نئی راہیں کھلیں گی۔ بجلی کے منصوبوں کے علاوہ انفرا سٹرکچر کے پراجیکٹس پر دوطرفہ تعاون کو فروغ دینے کے حوالے سے معاہدے ہوں گے۔ میں سمجھتا ہوں کہ موجودہ دورئہ چین پاکستان کے 18 کروڑ عوام کی ترقی اور خوشحالی کیلئے دوررس نتائج کا حامل ہوگا۔ ملک سے لوڈ شیڈنگ کے اندھیرے دور کرنے کے حوالے سے بھی یہ دورہ خاص اہمیت کا حامل ہے۔ وزیراعظم محمد نواز شریف کی قیادت پر چین کی لیڈرشپ بھرپور اعتماد کرتی ہے اور پاک چین دوستی ہمیشہ آزمائش کی کسوٹی پر پورا اتری ہے۔ مسلم لیگ ن کی حکومت وزیراعظم محمد نواز شریف کی ولولہ انگیز قیادت میں ملک کو بحرانوں سے نکالنے کیلئے پرعزم ہے اور اس ضمن میں ہمارا عظیم دوست ملک چین پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف چین کے دورے پر روانہ ہوئے۔ روانگی سے قبل وزیراعلیٰ شہباز شریف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت عوام کے مسائل کے حل کے لئے کوشاں ہے اور چین کا دورہ نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ قبل ازیں پنجاب ہیلتھ ریفارمز روڈ میپ کے حوالے سے اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا ہے کہ تعلیم کے شعبہ میں بہتری لانے کے ساتھ صحت عامہ کی معیاری سہولتوں میں اضافہ پنجاب حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔عوام کو علاج معالجہ کی جدید اور معیاری سہولتوں کی فراہمی کیلئے ٹھوس اقدامات کئے گئے ہیں۔ برطانیہ کے ادارے ڈیفڈ کے اشتراک سے پنجاب ہیلتھ ریفارمز روڈ میپ پر عملدرآمد تیزی سے جاری ہے۔ ڈیفڈ کے تجربات، تعاون اور مشاورت سے صحت کے شعبہ میں ضروری اصلاحات لا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پرائمری ہیلتھ کیئر پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ دیہی و بنیادی مراکز صحت کو حقیقی معنوں میں عوام کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کے مراکز بنانے پر کام کررہے ہیں۔ ڈیفڈ کے تعاون سے جاری مدر اینڈ چائلڈ ہیلتھ کیئر پروگرام کو تیز رفتاری سے آگے بڑھایا جائے۔ تعلیمی شعبے میں اساتذہ کے تربیتی پروگرام کے طرز پر ہیلتھ ورکرز کو بھی جدید تربیت دینے کے حوالے سے پروگرام مرتب کیا جائے۔ ویکسی نیشن پروگرام کی ڈیجیٹل مانیٹرنگ کی جارہی ہے۔ بیماریوں سے بچائو کیلئے ویکسی نیشن پروگرام کی کوریج بڑھانے کیلئے اقدامات کئے گئے ہیں۔ پنجاب ہیلتھ ریفارمز روڈمیپ کے اہداف اجتماعی کاوشوں کے ذریعے حاصل کرنے ہیں۔ شرح آبادی کوکنٹرول کرنا ازحد ضروری ہے، اس کے بغیر ترقی کے ثمرات حاصل نہیں ہوسکتے۔ روٹا وائرس ویکسی نیشن کیلئے پلان بناکر اس پر فی الفور عملدرآمد شروع کیا جائے۔ علاوہ ازیں شہباز شریف نے نشتر کالونی میں زیادتی کے بعد چار سالہ بچے کو قتل کرنے کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشنز سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...