سرحدی کشیدگی کے باوجود 3 ماہ میں بھارت کو برآمدات 13.3 فیصد بڑھی

08 نومبر 2014

لاہور (احسن صدیق) بھارت سے سرحدی کشیدگی کے باوجود رواں مالی سال 2014-15ء میں جولائی سے ستمبر (3 ماہ) کے دوران پاکستان کی جانب سے بھارت کو برآمدات میں 13.3 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور انکا حجم 10 کروڑ 8 لاکھ 87 ہزار ڈالر رہا جو گذشتہ مالی سال 2013-14ء میں اتنی مدت کے دوران 8 کروڑ 90 لاکھ 68 ہزار ڈالر تھا۔ برآمدات میں اضافے کے باوجود پاکستان کو رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں بھارت سے باہمی تجارت کے نتیجے میں 26 کروڑ 56 لاکھ 38 ہزار ڈالر کا خسارہ ہوا ہے کیونکہ پاکستان نے بھارت کو 10 کروڑ 8 لاکھ 87 ہزار ڈالر کی اشیاء برآمد کیں جبکہ بھارت سے 36 کروڑ 65 لاکھ 25 ہزار ڈالر کی اشیاء درآمد کی گئیں۔ واضح رہے کہ گذشتہ مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں بھی پاکستان کو بھارت سے باہمی تجارت کے نتیجے میں 24 کروڑ 29 لاکھ 79 ہزار ڈالر کا تجارتی خسارہ پہنچا تھا۔ لاہور ایوان صنعت و تجارت کے سابق سینئر نائب صدر شیخ محمد ارشد، پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین عبدالباسط، پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عاصم رضا احمد نے کہا ہے کہ بھارت کے ساتھ تجارت بڑھانے پر ملک کی کاروباری برادری کو کوئی اعتراض نہیں ہے لیکن بھارت پاکستان کے ساتھ پائیدار تجارت کیلئے کشمیر، آبی تنازعات سمیت تمام تنازعوں کو حل کرے اور انہوں نے حکومت پر بھی زور دیا کہ ان مسائل کے حل تک بھارت کو تجارت کیلئے ہرگز پسندیدہ ملک کا درجہ نہ دیا جائے۔