امن مذاکرات ناکام ہوئے تو اسرائیل کیخلاف تیسری انتفادہ تحریک شروع ہو جائیگی: کیری‘ فلسطینی علاقوں میں یہودی بستیوں کی تعمیر کو غیرقانونی قرار دیدیا

08 نومبر 2013

بیت اللحم (اے پی پی) امریکہ نے مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں یہودی بستیوں کی تعمیر کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے اسرائیلی منصوبے کو مسترد کر دیا ہے۔ فلسطینی ذرائع ابلاغ کے مطابق امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس سے ملاقات کی جس میں امن مذاکرات سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے دوران محمود عباس نے فلسطینی علاقوں میں یہودی بستیوں کی تعمیر کا معاملہ اٹھایا اور کہا کہ اسرائیل کی جانب سے یہودی بستیوں کی تعمیر روکی جائے، جب تک یہ منصوبہ واپس نہیں لیا جاتا تب تک امن مذاکرات آگے نہیں بڑھ سکتے۔ یہودی بستیاں امن مذاکرات میں رکاوٹ ہیں۔ بیت اللحم میں دونوں رہنمائوں کے درمیان ہونے والی ملاقات کو امن مذاکرات کی بحالی کیلئے بڑی کوشش قرار دیا جا رہا ہے۔ جان کیری نے کہا کہ ہم یہودی بستیوں کی تعمیر کو غیر قانونی سمجھتے ہیں۔اسرائیلی چینل ٹو اور فلسطینی براڈ کاسٹنگ کارپوریشن کو انٹرویو میں اسرائیل کو انتباہ کیا اگر فلسطین سے امن مذاکرات ناکام ہوئے تو صہیونی ریاست کے خلاف تیسری  انتفادہ تحریک شروع ہو جائے گی۔