نمونیے سے پاکستان میں ہر سال92 ہزار بچے مر جاتے ہیں: ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ

08 نومبر 2013

لاہور (نیوز رپورٹر) چیئرمین نیشنل امیونائزیشن ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ  ڈاکٹر طارق بھٹہ اور چلڈرن ہسپتال کے شعبہ اطفال کے سینئر پروفیسر ڈاکٹر طاہر مسعود نے کہا کہ نمونیہ ہر 30 سیکنڈ میں بچے کی جان لے لیتا ہے۔  عالمی سطح پر بچوں کی اموات کی سب سے بڑی وجہ ہے انہوں نے کہا صرف پاکستان میں پانچ سال سے کم عمر کے 92 ہزار بچے نمونیہ کی وجہ سے موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں یہ بات انہوں نے 12 نومبر کو عالمی نمونیہ ڈے کے موقع پر مقامی ہوٹل میں پریس  بریفنگ میں کہی۔