قانون کا احترام

08 نومبر 2013

مکرمی!  ہم آج جس معاشرہ   میں رہتے ہیں وہاں پر قانون کااحترام نہ کیے جانے دولت اورپیسہ سب سے بڑی طاقت ہونے اور معاشرتی تفریق کی وجہ سے ایک عام اور غریب آدمی( خواہ مرد ہو یا عورت) کی زندگی کی کوئی قدر نہیں۔ جن ممالک نے زیادہ سے زیادہ شرح خواندگی اور قانون کا احترام ممکن بنالیا ہے وہاں امیر غریب ہر ایک کے لیے ہی قانون ہونے کی وجہ سے طاقتور یا امیر شخض غریب اور کمزوروں پر ظلم نہیں کرسکتا۔ مگر پاکستان میں قانون کے رکھوالے سرکاری مشینری اورعدل و انصاف پر کھڑے پہرہ دار ہمیشہ طاقتور، ظالم ، جابر اوردولت مند کے اشاروں پر چلتے رہے ہیں اور تھوڑے سے فرق کے ساتھ آج بھی وہی حالت ہے۔ ہم پورے معاشرے خاص طور پر اعلیٰ عدلیہ کی خدمت میں یہ حقیقت سامنے رکھنے کی جرات ضرور کریں گے کہ اگر ظالم ، جابر اور قاتل افراد اپنی طاقت دولت اور تعلقات و اثروسوخ کی وجہ سے کسی بھی ذریعہ سے سزا سے بچ گئے یا بچتے رہے تو اسکا عام آدمی اور غریب وکمزور طبقہ پر ہی اثر پڑے گا۔ غریب کی جان مزید بے وقعت ہوجائیگی اور ظالم لوگ اپنی دولت طاقت کے زغم میں اور سزا سے بچ نکلنے کے یقین کے ساتھ غریبوں کی جان اور عزت  کی دھجیاں اڑانے کومعمول بنالیں گے۔(امجد علی ۔ لاہور)