بلدیاتی نظام پر متحدہ، پی پی اتفاق رائے نہ ہو سکا: گورنر سندھ

08 جولائی 2013

کراچی (وقت نیوز) گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی اور ایم کیو ایم میں بلدیاتی نظام پر اتفاق نہیں ہو سکا۔ کراچی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سندھ میں نیا بلدیاتی نظام تمام فریقین کی رضامندی سے ہی لایا جا سکتا ہے، سندھ میں امن و امان کے قیام کے حوالے سے گورنر سندھ نے کہاکہ صوبائی حکومت کی باقاعدہ درخواست پر وفاقی حکومت مدد کرے گی۔ وفاقی وزیر داخلہ کراچی میں امن کیلئے تعاون کی پیشکش کر چکے ہیں۔این این آئی کے مطابق ڈاﺅ میڈیکل یونیورسٹی کے دورے کے موقع پر اپنی گفتگو میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العبا دخا ن نے کہا کہ گذشتہ روز لیاری کے حوالے سے بلائے گئے اجلاس میں صدر مملکت آصف علی زرداری نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایت کی کہ جرائم پیشہ عناصر کیخلاف بلاتفریق کارروائی کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے کراچی میں قیام امن کے لئے ہر ممکنہ تعاون کی پیش کش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلدیاتی معاملہ متنازعہ ہے جس کا تصفیہ طلب حل نکالنے کیلئے کوششیں جاری ہیں اتفاق رائے سے کوئی نظام لایا جاسکتا ہے جس کی اسمبلی سے منظوری لینا ہوگی۔ اپنے دورے کے دوران گورنر سندھ نے بلڈ ٹیسٹ لیبارٹری کا بھی افتتاح کیا۔ اس موقع پر انھیں لیبارٹری کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ یہ پاکستان کی پہلی جدیدلیبارٹری اورTotal Automation Systam پرہے جس میں خود کار نظام کے ذریعے ایک گھنٹے میں خون کے 800 ٹیسٹ ہوتے ہیں اور دو ہفتہ کے لئے 15 ہزار نمونے محفوظ بنائے جاسکے ہیں جبکہ بیک وقت خون کے 10 ٹیسٹ ایک گھنٹے میں کئے جاسکتے ہیں۔