بھارت : بہار میں بودھ عبادت گاہ کے قریب یکے بعد دیگرے 9 بم دھماکے‘ 3 ہلاک‘ 12 زخمی

08 جولائی 2013

نئی دہلی/بودھ گایا(آن لائن + اے ایف پی) بھارتی ریاست بہار میں واقع بودھ عبادت گاہ کے باہر پے درپے 9 دھماکوں کے باعث 3 افراد ہلاک جبکہ دو غیر ملکیوں سمیت 12 افراد زخمی ہوگئے ۔ بھارتی حکام کے مطابق ریاست بہار کا علاقہ بودھ گایا اتوار کی صبح دھماکوں سے لرز اٹھا اور وہاں پر موجود بودھ عبادتگاہ کے باہر 9 دھماکے ہوئے۔ حکام کے مطابق اس واقعہ میں 5 افراد زخمی ہوئے جن میں 2 غیر ملکی بھی شامل ہیں۔ ان غیرملکیوں میں ایک تبت اور ایک تھائی لینڈ کا بدھ بکھشو شامل تھا۔ ادھر بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ دھماکے کے بعد سکیورٹی اہلکاروں نے عبادتگاہ خالی کرالی اور دھماکے کی جگہ امدادی کارروائیاں شروع کردی گئی ہیں۔ مہابدھی مندر مہاتما بودھ کے پیروکاروں کا عبادتگاہ ہے جس کا ملکی و غیر ملکی سیاحوں کی بڑی تعداد دورہ کرتی ہے۔ میڈیا رپورٹ میں کہا گیا کہ عبادتگاہ کی عمارت کو کوئی نقصان نہیں پہنچا تاہم دھماکوں کے بعد فرانزک ٹیم اور بم ڈسپوزل سکواڈ موقع پر پہنچ گئے جبکہ مقامی پولیس نے عبادتگاہ کے اردگرد سکیورٹی بڑھادی ہے۔ ادھر بھارتی پولیس کے سپرنٹنڈنٹ کا کہنا تھا 5 بم اور بھی ملے ہیں جنہیں ناکارہ بنادیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ دھماکے 2 سے 3 منٹ کے اندر ہوئے ہیں اور پہلا دھماکہ صبح ساڑھے پانچ بجے ہوا جبکہ بہار کے وزیراعلی نتیش کمار بھی موقع پر پہنچ گئے۔ ادھر بھارتی وزارت داخلہ نے اس بات کی تصدیق کی کہ یہ ایک دہشت گردانہ حملہ تھا جبکہ رپورٹوں میں یہ بھی کہا گیا کہ انٹیلی جنس نے ریاستی حکومت کو بودھ عبادتگاہ پر ممکنہ دہشت گردانہ حملوں کا انتباہ دیا تھا اور اپیل کی گئی تھی کہ سکیورٹی کو بڑھایا جائے۔
بھارت / حملے