شوگر کے مریض معالج کے مشورہ سے روزہ رکھیں: ڈاکٹر طاہر رسول

08 جولائی 2013

لاہور (سپیشل رپورٹر) خوت ہیلتھ سروسز ذیابیطس سینٹر ٹاﺅن شپ میں ذیابیطس کے مریضوں کے لئے رمضان اور روزے کے موضوع پر سیمینا ر کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پر شرکاءکے شوگر کے ٹےسٹ بھی کئے گئے۔ پروگرام کوآرڈےنےٹر روبی دانےال بھی اس موقع پر موجود تھےں۔ ماہرِ ذیابیطس ڈاکٹر طاہر ر سول نے سیمینار کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شوگر کا مریض اپنے معالج سے مشورہ کر کے روزہ رکھیں کیونکہ روزہ رکھنے سے خون میں شکر کی مقدار خطرناک حد تک کم ہو سکتی ہے۔ خون میں تیزابیت بڑھ سکتی ہے، جسم میں پانی کی کمی ہو سکتی ہے لہٰذا شوگر کے مریض ڈاکٹر سے اپنی ادویات یا انسولین کو دوبارہ ایڈجسٹ کروائیں۔ رمضان میں شوگر کے مریض ورزش کو افطاری کے دو گھنٹے بعد کریں جبکہ مکمل تراویح کی ادائیگی بھی روزمرہ کی ورزش کے برابر ہے۔ افطار میں زیادہ میٹھی چیزوں سے پرہیز کریں۔ اپنے کھانے میں پھل، سبزیاں، دالیں اور دہی کا استعمال زیادہ کریں۔ اخوت کے ڈائریکٹر ڈاکٹر اظہارالحق ہاشمی نے کہا کہ شوگر کے مریض سحری قدرے تاخیر سے کریں۔ سحری میں کم کوکنگ آئل سے بنا ہوا پراٹھا استعمال کر سکتے ہیں۔ شوگر کے مریض افطار کے بعد پانی زیادہ استعمال کریں۔ ذیابیطس میں مبتلا حاملہ خواتین روزہ نہ رکھیں ٹائپ ون ذیابیطس والے مریض بھی روزہ رکھنے سے اجتناب کریں۔