دولتالہ واٹر سپلائی پراجیکٹ 12سال بعد بھی پایہ ئِ تکمیل تک نہ پہنچ سکا

07 نومبر 2017

دولتالہ سکھو(نامہ نگار)12سال قبل شروع ہونیوالا دولتالہ واٹر سپلائی پراجیکٹ 13کروڑ روپے سے زائد کی خطیر لاگت خرچ ہونے کے باوجود آج تک پایہ ئِ تکمیل تک نہیں پہنچ سکا،سینکڑوں لوگوں نے ہزاروں روپے خرچ کرکے کنکشن بھی حاصل کر رکھے ہیں مگر آج تک پانی کی ایک بوند تک نہیں مل سکی،دولتالہ کے شہری آج بھی پانی کی شدید کمی کا شکار ،پینے کے صاف پانی کی بھی قلت،زیر زمین پانی زہریلا اور آلودہ ہونے کی وجہ سے مضر صحت ہو گیا ،یپا ٹائٹس بی،سی سمیت دیگر جان لیوا امراض میں بھی اضافہ، ارباب اختیار عوام کی حالت زار پر توجہ دیتے ہوئے پینے کے صاف پانی کی فراہمی کو جلد از جلد ممکن بنانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائیںان خیالات کا اظہار یونین کونسل دولتالہ1سے جنرل کونسلر چوہدری ابرار حسین اور جنرل کونسلر رانا محمد فاروق نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کیا ،انہوں نے کہا کہ صاف پانی کی فراہمی دولتالہ کے شہریوں کا بنیادی حق ہے ،انہوں نے اسسٹنٹ کمشنر گوجرخان ،ایم پی اے راجہ شوکت عزیز بھٹی اور وفاقی پارلیمانی سیکرٹری و ایم این اے راجہ جاوید اخلاص سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر واٹر سپلائی سکیم دولتالہ کی بحالی کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں