8 نومبر کو جمعیت علماء اسلام جنوبی پنجاب کے نام سے بلایا جانیوالا اجلاس غیر دستوری ہے : ذمہ داران

07 نومبر 2017

ملتان (نامہ نگار خصوصی) جمعیت علماء اسلام (س) پاکستان خالص دینی ، جمہوری و پارلیمانی جماعت ہے ۔ اس کے تمام تر فیصلے دستور کے مطابق کئے جاتے ہیں ۔ جمعیت علماء اسلام کا دستور امام الاولیاء مولنا احمد علی لاہور ی ، مولانا غلام غوث ہزاروی ، حضرت شیخ درخواستی ، باطل حرمت مولانا مفتی محمود ، مولانا عبیداللہ انور ، شیخ الحدیث مولانا عبدالحق کا مرتب کردہ ہے ۔ اس معطل کرکے اکابر کی نمائندہ جماعت کو نقصان پہنچانے کی سازشیں کرنے والوں کا چہرہ بے نقاب کرنے کا وقت آگیا ہے ۔ جمعیت علماء اسلام کے تمام صوبوں اور اضلاع کی مجالس عاملہ اپنی پرانی حیثیت میں بحال ہیں ۔ 3-1/2 سال قبل نیو سمن آباد لاہور میں مولانا مفتی حبیب الرحمن درخواستی اور مولانا مفتی خالد محمود ازھر کو بالترتیب صوبائی امیر اور جنرل سیکرٹری بنایا گیا تھا ۔ نئے نظمائے انتخاب تک تمام صوبائی و ضلعی عہدیداران اپنے عہدوں پر قائم ہیں چور دروازے سے غیر دستور نامزدگیاں غیر اخلاقی اور شرمناک ہیں ۔ نومبر کو جمعیت علماء اسلام جنوبی پنجاب کے نام سے بلایا جانے والا اجلاس غیر دستوری ہے ۔ ان خیالات کا اظہار جمعیت علماء اسلام کے ضلع ملتان ، ضلع خانیوال ، ضلع ساہیوال ، ضلع پاکپتن ، ضلع بہاولپور ، ضلع بہاولنگر ، ضلع وہاڑی اور ضلع لیہ کے ذمہ داران نے مدرسہ جامہ جمال المدارس خانیوال روڈ ملتان میں منعقدہ مشاورتی اجلاس میں کیا ۔ اجلاس کی صدارت جمعیت علماء اسلام کے صوبائی نائب امیر مولانا مفتی محمد احمد محمودی نے کی ۔ اجلاس نے 8 نومبر کے اجلاس سے لاتعلقی کا اظہار کیا ۔