سینڈیکیٹ ویمن یونیورسٹی ملتان کا 8اسسٹنٹ رجسٹرار خزانچی اور کنٹرولر کی بھرتی منسوخ کرنے کا حکم

07 نومبر 2017

ملتان(نمائندہ نوائے وقت) ویمن یونیورسٹی ملتان کی سینڈیکیٹ نے 8اسسٹنٹ رجسٹرار، خزانچی اور کنٹرولر کی بھرتی منسوخ کرنے حکم دے دیا ،تفصیل کے مطابق ویمن یونیورسٹی کی سینڈیکیٹ نے کرپشن سامنے آنے پر بھرتی منسوخ کردی ذرائع کے مطابق سابق وائس چانسلر ڈاکٹر شاہد حسنین نے اپنے آخری دور میں 8اسسٹنٹ ، خزانچی اور کنٹرولر کو بھرتی کرنے کیلئے ٹیسٹ اور انٹرویو کئے تھے جس میں کرپشن کرتے ہوئے کامیاب امیدواروں کو ٹیسٹ میں 15 نمبر گریس مارکس دے کر انٹرویو میں بلایا گیا اور ان کی بھرتی مکمل کی گئی ، مگر ڈاکٹر شاہد حسنین کے ریٹائرڈ منٹ کے بعد ان کی سینڈیکیٹ سے منظوری نہ لی جاسکی ، گزشتہ ماہ ہونے والے سینڈیکیٹ اجلاس میں فنانس کے نمائندہ کی طرف سے اعتراضات کے بعد انکوائری کمیٹی بنائی گئی مگر کیس اس کمیٹی کو نہیں بھیجاگیا گزشتہ روز اجلاس کے دوران قائم مقام وائس چانسلر طلعت افزا اس کا جواب دینے میں ناکا م رہیں کہ انکوائری کمیٹی کو کیس کیوں نہیں بھجوایا گیا اجلاس میں ارکان صوبائی اسمبلی نے کہا کہ اس وقت احتساب کا عمل جاری ہے ہم کسی کرپشن کا حصہ نہیں بن سکتے ، چیئرمین بورڈ پروفیسر ریاض ہاشمی کا کہنا تھا کہ انتظامیہ کو کرپشن سے دور رہ کر شفاف بھرتی کرنی چاہیے ، جس پر ممبران نے ڈاکٹر طلعت افزاپر ناراضی کا اظہار کیا انہوں نے کرپشن کے حوالے سے بنائی گئی کمیٹی کی مدد کیوں نہیں کی جس کے بعد ہائوس نے بھرتی منسوخ کرنے کا حکم دے دیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ فنانس ڈیپارٹمنٹ نے اجلاس کا ایجنڈا نہ بھجوانے پر اپنا نمائند ہ نہیں بھیجا اور اس کی رپورٹ سی ایم کو کرنے کا کہا ہے۔