ہائیکورٹ کا سموگ کے خاتمے کیلئے حفاظتی اقدامات سے متعلق تحریری رپورٹ پیش کرنے کا حکم

07 نومبر 2017

لاہور(وقائع نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ کی ہدائت پر منظور شدہ سموگ پالیسی عدالت میں پیش کر دی گئی۔فاضل عدالت نے سموگ کے خاتمے اور اس سے نمٹنے کیلئے کئے جانے والے حفاظتی اقدامات سے متعلق تحریری رپورٹ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیدیا۔فاضل عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ سموگ کے خاتمے کیلئے حکومت کی جانب سے سنجیدہ اقدامات دکھائی نہیں دے رہے۔ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ گذشتہ برس نومبر میں سموگ کے نتیجے میں شہری مختلف امراض میں مبتلا ہوگئے مگر حکومت نے شہریوں کی رہنمائی کیلئے اور سموگ کے خاتمے کیلئے عملی اقدامات نہیں کئے۔سیکرٹری ماحولیات عدالت میں پیش ہوئے اور عدالت کو آگاہ کیا کہ بھارت میں فصل خریف کی کٹائی کے بعد پھوک کو آگ لگا دی گئی جس سے سموگ پیدا ہوا۔ انہوں نے سموگ سے نمٹنے کیلئے منظور کردہ پالیسی عدالت میں پیش کی اور کہا کہ سموگ میں کمی کیلئے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے خلاف کاروائی کی جا رہی ہے۔