حکومت بریسٹ کینسر کے تدارک کیلئے اقدامات کررہی ہے، ڈاکٹر ندیم شفیق

07 نومبر 2017

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی)نیشنل کونسل آف سوشل ویلفیئر ، حکومتِ پاکستان کے زیر اہتمام عوامی آگاہی پروگرام کے سلسلہ میں ڈاکٹر طارق فضل چوہدری ، وزیرِ مملکت، کیڈ کی خصوصی ہدایت پر ایک روزہ سیمینار نوری ہسپتال اسلام آباد کے تعاون سے بعنوان ”بریسٹ کینسر سے بچاﺅ اور ہماری سماجی ذمہ داریاں “ منعقد کیا گیا۔ سیمینار کی مہمانِ خصوصی ڈاکٹر حمیرا محمود، کینسر اسپشلسٹ، نوری ہسپتال ، اسلام آباد تھیں ۔ سیمینار میں سول سوسائٹی، گرلز گائیڈ، ، مختلف حکومتی اداروں کے نمائندوںطالبات اور مختلف شعبہءزندگی سے تعلق رکھنے والی خواتین نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ اس موقع پر ڈاکٹر ندیم شفیق ملک ، چئیرمین، نیشنل کونسل آف سوشل ویلفئیر، حکومتِ پاکستان نے اپنے خصوصی پیغام میں کہا کہ پاکستان میں خواتین میں بریسٹ کینسرکا مرض تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ حکومت پاکستان اس مسئلہ سے آگاہ ہے اور اس کے تدارک کے لیئے بھرپور اقدامات کر رہی ہے۔جس میں خواتین کے لیئے آگاہی مہم بھی شامل ہے ۔ بریسٹ کینسر سے بچاﺅ کی آگاہی مہم میں پرنٹ اور الیکٹرونک میڈیا اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔ پاکستان میں خواتین آبادی کا نصف ہیں۔ بریسٹ کینسر ایک بین الاقوامی مسلہ ہے۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن حکومتوں اور سول سوسائٹی کے ساتھ مل کر دنیا بھر میں بریسٹ کینسر سے بچاﺅ کے لیئے کام کر رہی ہے۔ خصوصاً خواتین میں آگاہی کے لیئے اکتوبر کا پورا مہینہ یہ مہم چلائی جاتی ہے۔ پاکستان میں ابھی اس پر بہت کام کرنے کی ضرورت ہے۔ دور دراز اورپسماندہ علاقوں تک بریسٹ کینسر سے بچاﺅ کے متعلق معلومات پہچانا ضرروری ہے تاکہ بر وقت تشخیص سے بہت سی خواتین کی زندگیاں بچائی جا سکتی ہیں۔ ماہرین یہ کہتے ہیں کہ پاکستان میں ماحولیاتی آلودگی بھی اس کا ایک سبب ہے اس لیئے اچھی صحت اور بریسٹ کینسر سے بچاﺅ کے لیے صاف ماحول بھی بہت ضروری ہے۔