منشیات مقدمہ کا ملزم رکن اسمبلی کی اہلیت چیلنج نہیں کر سکتا‘ حنیف عباسی کیخلاف درخواست دائر

07 نومبر 2017

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ میں پاکستان مسلم لیگ ن کے سابق رکن قومی اسمبلی حنیف عباسی کے خلاف دائر کی گئی ایک آئینی درخواست میں موقف اختیار کیا گیاہے کہ منشیات کے مقدمہ کا کوئی بھی ملزم اراکین اسمبلی کی اہلیت کے حوالے سے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کرنے کا مجازنہیں ہے ، درخواست گزار شاہد اورکزئی نے سوموار کو دائر درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور جنرل سیکرٹری جہانگیر خان ترین کے خلاف سپریم کورٹ میںمقدمہ زیر سماعت ہے جس میں مسول علےان کو عوامی عہدہ کے لیئے نااہل قرار دینے کی استدعا کی گی ہے جبکہ کیس کے درخواست گزار حنیف عباسی ہیں۔ دوسری جانب حنیف عباسی کے خلاف راولپنڈی کی انسداد منشیات کی عدالت میں زیر سماعت مقدمہ میں ان پر فرد جرم عائد ہونے کے بعد ان کی حیثیت ایک ملزم کی سی ہے ،جس نے تاحال بریت کی بھی کوئی درخواست دائر نہیں کی ہے ،،ایسے حالات میں ایک ملزم کو اسمبلی کی صفائی ستھرائی کا کوئی حق نہیں ہے ،جبکہ اس نے جن مسول علیان کے خلاف درخواست دائر کی ہے ان میں سے ایک (عمران خان ) اس کا براہ راست انتخابی حریف ہے ، درخواست گزار نے مزید کہاہے کہ انتخابی قوانین کے تحت کوئی شخص اپنے حریف کو براہ راست سپریم کورٹ میں نہیں لے جاسکتا ہے ، اگر کوئی ایسی حرکت کرتا ہے تو وہ اس کے ذاتی مفادات کے حوالے سے ایک کوشش تو ہو سکتی ہے لیکن اس کا بنیادی حقوق سے کوئی تعلق نہیں ہوتا ہے۔