چین نے جزیرے بنانے والا جہاز متعارف

07 نومبر 2017

لندن(بی بی سی) چین نے ایک نیا جہاز متعارف کروایا ہے جو کہ اس طرز کے جزیرے بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے جو چین نے ساو¿تھ چائنا سی یعنی جنوبی بحیرہ چین میں بنائے ہیں۔ جس ادارے نے اس جہاز کو بنایا ہے اس نے اسے 'جادوئی جزیرے بنانے والا جہاز' کا نام بھی دیا ہے۔ اس بحری جہاز کا نام ہے ٹیان کن ہاو¿۔ جسے چینی روایات میں ایک دیو ہیکل مچھلی سمجھا جاتا ہے جو کہ ایک پرندے میں بھی تبدیل ہوجاتی ہے۔ اس بحری جہاز کی لمبائی 140 میٹر ہے اور چین میں اپنی نوعیت کا سب سے بڑا جہاز ہے۔ یہ چین کے سمندر کی صفائی کرنے والے دوسرے جہازوں سے کہیں زیادہ طاقت ور ہے اور یہ چھ ہزار کیوبک میٹر کی گہرائی تک کھدائی کرسکتا ہے۔ جو کہ تین اولمپک سوئمنگ پول کے برابر ہے۔ یہ جہاز سمندر کی تہہ سے ریت، مٹی اور سمندری پودوں کو باہر نکال کر اسے پندرہ کلومیٹر دور زمین پر پہنچاتا ہے۔ اسی طرح کے جہاز 2013ءمیں ساو¿تھ چائنا سی میں چینی جزیروں کو بنانے میں استعمال ہوئے تاہم وہ سائز میں ٹیان کن ہاو¿ سے چھوٹے تھے۔
جہاز