بس بہت ہوچکا ، محکمہ قانون زیرالتواء مقدمات فوری نمٹائے : وسیم اختر

07 نومبر 2017

کراچی (اسٹاف رپورٹر) میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ محکمہ قانون مختلف عدالتوں میں زیرالتواء مقدمات کا فیصلہ کے ایم سی کے حق میں کرانے کیلئے موثر کردار ادا کرے تاکہ شہر میں تجاوزات اور زمینوں پر غیر قانونی قبضے سمیت غذائی اشیاء میں ملاوٹ اور غیر صحت بخش اشیاء کی فروخت جیسی سرگرمیوں کا سدباب کیا جاسکے‘ محکمہ قانون کے وکلاء تمام کیسز کو سنجیدگی سے لیں‘ ماضی میں جو ہوتارہا وہ پریکٹس نہیں چاہئے‘وکلا کی غفلت سے ادارے نے بہت نقصان اٹھا لیا اب یہ قابل قبول نہیں‘ اس معاملے میں سختی سے کام لینا ہے‘ کے ایم سی کے جتنے مقدمات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں ان کے متعلق قانونی امور کمیٹی کے ساتھ مستقل مشاورت یقینی بنائی جائے‘ کے ڈی اے ماسٹر پلان ‘ ایم ڈی اے اور دیگر محکموں سے متعلقہ معلومات اور دستاویزات کے حصول کیلئے سیکریٹری لوکل گورنمنٹ اور ڈی جی کے ڈی اے کو خط لکھا جائے‘ ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ قانون کے افسران و وکلاء اور قانونی امور کمیٹی کے ساتھ منعقد ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا‘ اس موقع پر قانونی امور کمیٹی کے چیئرمین عارف خان ایڈووکیٹ‘ سٹی کونسل میں پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی‘ چیئرمین اراضیات کمیٹی ارشد حسن‘ لیگل کمیٹی کے ممبران‘ مشیر قانون سعید اختر‘ ڈپٹی لیگل ایڈوائزر قاضی عابد‘ ڈائریکٹر ٹیکنیکل ایس ایم شکیب‘ ڈائریکٹر فنانس محمود بیگ‘ پینل ایڈووکیٹ ‘پراسیکیوٹرز اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔ میئر کراچی نے اجلاس کے دوران فرداً فرداً تمام وکلاء سے انہیں دیئے گئے کیسز کے متعلق تفصیلات معلوم کیںاور ہدایت کی کہ تمام وکلاء روزانہ کی بنیاد پر زیر سماعت مقدمات کے اسٹیٹس سے سربراہ محکمہ اور قانونی امور کمیٹی کو آگاہ رکھیں ۔