کراچی: قبائلی عمائدین کی گورنر خیبر پی کے سے ملاقات، حکومتی امن اقدامات کی حمایت

07 جون 2015

کراچی (آن لائن) قبائلی عمائدین نے ملک بھر میں ترقیاتی منصوبوں اور امن وامان کے حکومتی اقدامات کی حمایت کا اعلان کر دیاہے۔ہفتہ کے روز گورنر خیبر پی کے سردار مہتاب عباسی سے کراچی میں میں 200 قبائلی رہنمائوں پر مشتمل گرینڈ جرگہ نے مقامی ہوٹل میں ملاقات کی جس میں قبائلی علاقوں میں ترقیاتی منصوبے، آئی ڈی پیز کی واپسی ،ملک میں امن وامان کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ جرگے نے قبائلی علاقوں میں امن و امان اور ترقی کے حکومتی اقدامات کو سراہا اور مکمل اطمینان کا اظہار کیا ۔ قبائلی عمائدین نے کہا کہ کسی اندرونی اور بیرونی دشمن کو ملک کا امن و امان برباد کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی اور حکومت سے مکمل تعاون کیا جائیگا۔ جرگے نے قبائلی علاقوں میں آپریشن سے بے گھر ہونیوالے افراد کی بحالی کے لئے حکومتی اقدامات پر اعتماد کا اظہار کیا اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ بے گھر ہونے والے افراد کو جلد از جلد اپنے علاقوں میں بھیجنے کے لئے اقدامات کرے اور حکومت آپریشن سے ہونیوالے نقصان کا ازالہ کرے۔ گورنر سردار مہتاب نے قبائلی عمائدین کو یقین دلایا کہ جلد از جلد متاثرین آپریشن کو اپنے گھروں میں آباد کریں گے او ر ان کوریلیف کیلئے مخصوص فنڈز سے رقم بھی ادا کی جائیگی۔انہوں نے کہا کہ مالی سال 2015-16ء میں 80 ارب روپے رکھے گئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت قبائلی علاقوں کی ترقی کیلئے خاطر خواہ اقدامات کر رہی ہے جس میں سکولوں‘ کالجوں کی تعمیر‘ سڑکوں اور ہسپتالوں کی تعمیر نو کے منصوبے شامل ہیں۔ گورنر نے مزید کہا کہ اقتصاداری راہداری منصوبے سے ملک کے دیگر علاقوں کی طرح قبائلی علاقوں کو بھی فائدہ ہو گا اور اس منصوبے کے اثرات قبائلی علاقوں کی تعمیر و ترقی پر بھی پڑیں گے۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا میں امن کا قیام اور تعمیر و ترقی حکومت کی اوّلین ترجیح ہے، متاثرین کی بحالی کیلئے وسائل آڑے نہیں آنے دیں گے۔