ایل این جی کی قیمت کا فارمولا طے‘ آئی ڈی پیز کیلئے 85 ہزار میٹرک ٹن گندم فراہمی کی منظوری

07 جون 2015
ایل این جی کی قیمت کا فارمولا طے‘ آئی ڈی پیز کیلئے 85 ہزار میٹرک ٹن گندم فراہمی کی منظوری

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی+نوائے وقت رپورٹ) وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار کی صدارت میں اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں آئی ڈی پیز خاندانوں میں تقسیم کیلئے 85 ہزار میٹرک ٹن گندم کی منظوری دیدی۔ نقل مکانی کرنیوالے افراد کیلئے مجموعی طورپر ایک لاکھ 55 ہزار میٹرک ٹن گندم فراہم کرنے کی منظوری پہلے ہی دی جا چکی ہے۔ گندم جون سے ستمبر کے درمیان تقسیم کی جائیگی۔ وزارت خزانہ گندم کیلئے 3.4 ارب روپے جاری کرے گی۔ گندم پاسکو فراہم کریگی۔ وزارت پٹرولیم کی تجویز پر اقتصادی رابطہ کمیٹی نے پی ایس او کو پریمیئر موٹر گیسولین مصنوعات اور ’’لوسلنر فرنس آئل سی این ایف بنیادپر درآمد کرنے کی اجازت دیدی جبکہ ہائی سلفر فرنس آئل پی این جی کی سپرائٹنگ کے پیرا میٹرز کی بھی منظوری دی گئی۔ پراسیسنگ پی ایس او کا مارجن 4 فی صد‘ ایس این جی پی ایل اور ایس ایس جی ایل کے اقتصادی مارجن فی ایم ایم بی ٹی یو 0.05 ڈالر ہوگا۔ اس معاملہ پر ہر تین ماہ کے بعد سیکرٹری خزانہ کی سربراہی میں کمیٹی نظرثانی کیا کریگا۔ وزارت پیٹرولیم کی پورٹ قاسم پر فاسٹ ٹریک ایل این جی درآمدی ٹرمینل‘ ایل این جی سروسز‘ ای ای ‘ ٹی پی ایل کی طرف سے گیس کی سٹوریج اینڈ ری گیسی فیکشن کے بارے میں تجویز پر ای سی سی نے پورٹ قاسم اتھارٹی کی اجازت دی کہ وہ اس بارے میں ایس آئی جی ٹی ٹی او معیار پر عمل کرے۔ اجلاس میں گندم کے برآمد کے لیے سندھ اور پنجاب کو معیاد میں 31 جولائی تک توسیع دینے کو بھی منظوری دیدی۔ نجی ٹی وی کے مطابق ای سی سی نے ایل این جی کی قیمت کا فارمولہ بھی طے کر لیا۔ ایل این جی کی قیمتوں کا سہ ماہی بنیادوں پر جائزہ لیا جائیگا۔