کوئٹہ : موٹر سائیکل سواروں کی فائرنگ‘ سب انسپکٹر سمیت چار اہلکار شہید

07 جون 2015

کوئٹہ/ اسلام آباد (ایجنسیاں) کوئٹہ کے علاقے پشتون آباد میں پولیس موبائل وین پر نامعلوم موٹرسائیکل سواروں کی فائرنگ سے سب انسپکٹر سمےت 4 پولیس اہلکار شہید ہوگئے، ملزم واقعے کے بعد موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ پشتون آباد میں ملا سلام روڈ پر پولیس اہلکار معمول کے گشت پر تھے کہ موٹر سائیکل سوار نامعلوم مسلح ملزموں نے وین پر فائرنگ کردی۔ 3 اہلکار ہسپتال منتقل کرتے ہوئے جبکہ چوتھا ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ شہید اہلکاروں کی نعشیں پوسٹ مارٹم کیلئے سول ہسپتال کوئٹہ منتقل کردی گئیں۔ واقعہ کے بعد پولیس اورایف سی کے اہلکار جائے وقوع پر پہنچ گئے اور شواہد اکٹھے کرکے تفتیش شروع کر دی۔ صدر مملکت ممنون حسین، وزیراعظم نوازشریف، وزےر داخلہ چودھری نثار، وزےراعلی شہبازشرےف اور عمران خان سمےت دےگر رہنماﺅں نے واقعہ کی شدےد مذمت کی ہے۔ نوازشریف نے غمزدہ خاندانوں سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے اس گھناو¿نے جرم میں ملوث مجرموں کو فوری طور پر گرفتارکرنے کی ہدایت کی۔ انکا مزید کہنا تھا کہ ایسے بزدلانہ حملے دہشت گردی کیخلاف ہمارا عزم کمزور نہیں کرسکتے۔آخری دہشت گرد کے خاتمہ تک آپریشن جاری رہیگا۔ وزیراعظم نے وزیر داخلہ سے رپورٹ طلب کرلی۔ پولیس کے مطابق شہید ہونے والوں میں سب انسپکٹر علی محمد، ڈرائیور عبد اللہ، سپاہی عطاءاللہ اور سپاہی عبداللہ خان شامل تھے۔ ذرائع کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لیکر تمام داخلی اور خارجی راستوں کو سیل کردیا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک نے بھی واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ واقعہ کے بعد شہر کی سکیورٹی سخت کردی گئی۔ واضح رہے دو روز قبل ہی کوئٹہ میں موٹرسائیکل پر ڈبل سواری پر عائد پابندی ختم کی گئی تھی۔
کوئٹہ/ 4 اہلکار شہید