ریلوے ورکر یونین نے بجٹ کے خلاف تحریک چلانے کا اعلان کردیا

07 جون 2015

کراچی( کامرس رپورٹر) ریلوے ورکر یونین کا ہنگامی اجلاس منعقد ہوا جس میں یونین کے عہدے داروں نے شرکت کی جس میں جنید اعوان، اقبال تنولی، عارف مشوانی، عباس لغاری، نور محمد شیخ، میاں امتیاز، باز محمد خان، خورشید اعوان، رانا شہزاد، حافظ رفیق، مشتاق جدون، مولوی عمران اور دیگر نے ویر خزانہ اسحاق ڈار کے پیش کردہ مزدور دشمن بجٹ پر سیر حاصل بحث کی اور مزدور دشمن بجٹ کے خلاف سخت تحریک چلانے کا اعلان کیا کیونکہ موجودہ بجٹ سرمایہ داروں، حکومت کے وفاقی سیکریٹریوں اور بیورو کریسی کے فائدہ کیلئے بنایا گیا ہے جس کا پاکستان کے عوام کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ یہاں تک کہ درمیانہ طبقہ مزدور طبقہ دونوں موجودہ بجٹ سے شدید متاثر ہوں گے۔ اسحاق ڈار سے یہ سوال کیا جاتاہے کہ کیا صرف وفاقی سیکریٹریز پاکستان کا نظام چلا رہے ہیں جن کی تنخواہوں میں سو فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے اور حکومت کے دیگر ملازمین کا نظام پاکستان میں کوئی کردار نہیں ہے، کیا وہ پاکستان کے شہری نہیں جن کیلئے صرف7.5فیصد کا اضافہ تجویز کیا گیا ہے۔ کیا اس بجٹ کو عوام دوست بجٹ کہا جاتا سکتا ہے جس میں بوں کے دودھ پر بھی ٹیکس عائد کیا گیا ہے جبکہ مراعات صرف سرمایہ داروں اور حکومت کے بیورو کریسی طبقہ کیلئے رکھی گئی ہے۔ ریلوے ورکرز یونین اس ناقص بجٹ کو شدت سے مسترد کرتی ہے۔