راجن پور: پنچائیت کا غیرقانونی فیصلہ، قتل کے ملزم کو گہرے پانی میں بٹھا دیا

07 جولائی 2013

راجن پور (نوائے وقت رپورٹ) سپریم کورٹ احکامات کے باوجود پنچایتوں کے غیرانسانی رسم و رواج جاری ہیں۔ نجی ٹی وی کے مطابق راجن پور میں قتل کا معاملہ نمٹانے کیلئے پنچایت کے ظالمانہ اقدامات سامنے آئے ہیں۔ بے گناہی ثابت کرنے کیلئے ایک شخص کو دس فٹ گہرے گڑھے میں پانی کے اندر بٹھا دیا گیا۔ طے شدہ وقت سے پہلے باہر آنے پر پنچایت نے نور حسن کو مجرم قرار دیدیا۔ پنچایت نے حکم میں کہا ہے کہ مجرم کے گھر سے دو رشتے لئے جائیں یا 10 لاکھ روپے جرمانہ دیا جائے، اگر مجرم سزائیں نہیں بھگت سکتا تو اسے قتل کے بدلے قتل کردیا جائے۔ غیر قانونی پنچایت نے نور حسن کو آج صبح نماز فجر تک کا وقت دیا ہے۔ قائم مقام ڈی پی او نے کہا ہے کہ ہمارے علم میں ایسا کوئی واقعہ نہیں۔ رات گئے غیرقانونی پنچائت کے سربراہ کو گرفتارکرلیا گیا۔