اطلاعات کے باوجود آئی جی آفس کے انتہائی قریب دہشت گردی، پولیس کچھ نہ کر سکی

07 جولائی 2013

لاہور (میاں علی افضل سے) آئی جی پنجاب آفس سے 13گز دور انارکلی فوڈ سٹریٹ میں ہونے والے دھماکے نے پولیس کی سکیورٹی کے دعوﺅں کا پول کھول دیا۔ سکیورٹی اداروں کے دعووﺅں کے برعکس دہشت گردوں نے وزیراعظم پاکستان کے حلقہ اور ریڈ زون میں دہشت گردی کے بڑے واقعہ کے ساتھ سکیورٹی کیلئے خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے جبکہ آئندہ چند دنوں میں رمضان المبارک کی آمد پر امن و امان کی بحالی سکیورٹی اداروں کیلئے بڑا چیلنج بن گیا ہے۔ گذشتہ دنوں انسپکٹر جنرل پنجاب پولیس خان بیگ کے پاس لاہور میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع کے باوجود سکیورٹی ادارے دہشت گردوں کی گرفتاری میں مکمل طور پر ناکام ہو گئے، دہشت گردوں کی جانب سے لاہور کے ریڈ زون کو نشانہ بنایا گیا جس میں آئی جی آفس انتہائی قریب جبکہ سپیشل برانچ، ہائیکورٹ، سپریم کورٹ رجسٹری برانچ، چیف سیکرٹری آفس، سٹیٹ بنک، ٹاﺅن ہال، بورڈ آف ریونیو، ایریگیشن، سی اینڈ ڈبلیو و دیگر دفاتر موجود ہیں جن میں روزانہ ڈی ایم جی، پی سی ایس، پولیس افسران کے دفاتر موجود ہیں جبکہ لاہور کی اہم شاہراہ مال روڈ بھی موجود ہے۔ ریڈ زون میں دھماکے سے دہشت گردوں کی جانب سے پیغام دے دیا گیا ہے کہ دہشت گردوں کی جانب سے کسی بھی ٹارگٹ کو نشانہ بنانا کوئی مشکل نہیں ہے۔
آئی جی آفس/ دہشت گردی