بجٹ میں غریب اور متوسط نہیں متمول طبقے پر ٹیکس لگایا گیا: مجتبیٰ شجاع

07 جولائی 2013

لاہور(کامرس رپورٹر) وزیرخزانہ پنجاب میاں مجتبی شجاع الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے موجودہ مالی سال کے بجٹ میں کوئی ایسا ٹیکس نہیں لگایا جو غریب اور متوسط طبقے کو متاثر کرے بلکہ متمول طبقے پرٹیکس لگایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت صوبہ کے عوام کی سماجی و اقتصادی حالت بہتر بنانے کے لئے اقدامات کرے گی تاہم حکومت کو بجلی کا بحران اور اسی طرح کے دیگر مسائل ورثے میں ملے ہیں جنہیں عوام کے تعاون سے حل کرلیا جائے گا۔ حکومت آزادی اظہار کی قائل ہے اور مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے ماضی میں بھی صحافیوں اور رائٹرز کی جانب سے کی جانے والی مثبت تنقید کے نتیجے میںاصلاح احوال کےلئے بھی اقدامات کئے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مقامی صحافی کی کتاب کی تقریب رونمائی کے موقع پر اپنے خطاب اور صحافیوں و دانشوروں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مجتبی شجاع الرحمن نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی حکومت نے اپنی کرپشن ، لوٹ مار اور بجلی کے بدترین بحران کو چھپانے کےلئے نئے صوبوں کا سٹنٹ چھوڑا تھا جسے جنوبی پنجاب کے لوگوں نے بری طرح رد کردیا۔ حکومت پنجاب نے موجودہ مالی سال کے بجٹ کے دوران پسماندہ و کم ترقی یافتہ علاقوں کے لئے زیادہ رقم مختص کی ہے اور جنوبی پنجاب میں ترقیاتی سکیموں کے لئے 93ارب روپے رکھے گئے ہیں جو کہ ترقیاتی بجٹ کا 32 فیصد ہے۔