کسی سے دشمنی ذاتی اختلاف نہیں ‘ جیتنے کے لئے ٹیم کو متحد ہونا پڑے گا ورنہ کامیابی مشکل ہو گی: مصباح

07 جولائی 2013
کسی سے دشمنی ذاتی اختلاف نہیں ‘ جیتنے کے لئے ٹیم کو متحد ہونا پڑے گا ورنہ کامیابی مشکل ہو گی: مصباح

لاہور (کامرس رپورٹر) قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کا کہنا ہے کہ دورہ ویسٹ انڈیز میں بھرپور محنت سے کھیلنے کی کوشش کریں گے تاہم جیت یا ہار سب کی اجتماعی ذمہ داری ہو گی۔ کالی آندھی کا رخ موڑکر شائقین کو راضی کرینگے ۔دورہ ویسٹ انڈیز کے لئے لاہور سے کراچی روانگی سے قبل ائرپورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مصباح الحق نے کہا کہ آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی میں ٹیم کی کارکردگی انتہائی خراب تھی مگر اب اسے بھول کر آگے بڑھنا ہو گا۔ ٹیم مثبت ذہن کے ساتھ ویسٹ انڈیزجا رہی ہے۔ ٹیم میں تبدیلیاں بھی کی گئی ہیں اور امید ہے ان کے مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔ مصباح الحق نے کہا کہ دورہ ویسٹ انڈیز میں اچھی کرکٹ کھیلیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ سب اکٹھا ہو کر کھیلیں گے اور ویسٹ انڈیز کے خلاف بیٹنگ، باو¿لنگ اور فیلڈنگ ہر شعبہ میں اچھی کارکردگی دکھانا ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ ویسٹ انڈیز کی کنڈیشنز انہیں سوٹ کرتی ہیں تاہم ہرکھلاڑی کو اپنی سو فیصد کارکردگی دکھانا ہو گی۔ باو¿لنگ بارے پوچھے گئے سوال پر مصباح الحق کا کہنا تھا کہ صرف سپنر ہی نہیں ان کی فاسٹ باو¿لنگ لائن اپ بھی بہتر ہے تاہم جیت کے لئے سب کو کارکردگی دکھانا ہو گی۔ نئے کھلاڑیوں بارے مصباح نے کہا کہ انہیں موقع دیں گے اور اب یہ ان پر منحصر ہے کہ بہترکارکردگی دکھا کر وہ ٹیم میں اپنی جگہ بنانے کی کوشش کریں۔ اس سوال پرکہ چیف سلیکٹر مستعفی ہو چکے ہیں اس کے بعد اب ٹیم کی شکست کی ذمہ داری کس پر عائد ہو گی۔ مصباح نے کہا مزیدکہ انہوں نے یہ ٹیم مشترکہ طور پر بنائی ہے اور اس کی ذمہ داری سلیکٹروں کے ساتھ ہم پر بھی عائد ہو گی۔ ٹیم کی اچھی اور خراب کارکردگی کی ذمہ داری قبول کروں گا۔ جیتنے کیلئے ٹیم کو متحد ہونا پڑے گا، ٹیم متحد نہ ہوئی تو جیت مشکل ہو گی‘ ٹیم متوازن ہے جو کھلاڑی دستیاب تھے ان میں سے بہترین کا انتخاب کیا۔ اب اگر ٹیم برا کھیلے تو ذمہ داری سب کی ہے‘ چیمپئنز ٹرافی میں آخری دو سیریز خراب بیٹنگ کی وجہ سے ہارے اس پر توجہ دینا ہو گی، سپنر ہمارا ہتھیار ہیں لیکن فاسٹ بولر بھی کسی سے کم نہیں ہیں۔ دورہ ویسٹ انڈیز میں ٹیم اچھا پرفارم کرے گی۔ سیریز جیتنے کا اچھا موقع ہے اس لئے بہترین کھیل پیش کرنا ہوگا۔قومی ٹیم کے باو¿لنگ کوچ محمد اکرم نے کہا کہ پاکستانی باو¿لرز ہمیشہ ہر ٹیم کے خلاف اچھی کارکردگی دکھاتے ہیں اور ان سے ویسٹ انڈیز کی کنڈیشنز میں بھی بہتر کارکردگی کی توقع ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ شاہد آفریدی کی واپسی سے باو¿لنگ میں بہتری آ ئی ہے جبکہ ٹیم کمبی نیشن بھی مظبوط ہو گیا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں محمد اکرم نے کہا کہ جنید خان، وہاب ریاض اور محمد عرفان کے علاوہ اسد علی بھی اچھے فاسٹ باو¿لر ہیں تاہم وہاں کڈیشنز کو دیکھتے ہوئے باو¿لروں کو استعمال کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ کوئی یہ نہ سمجھے کہ ٹیم سے باہر ہو گیا، تمام کھلاڑی ہماری نظر میں ہیں ان کی ٹیم میں گردش کرتے رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ 2015ءکے ورلڈکپ کو مدنظر رکھتے ہوئے ٹیم میں زیادہ تر نوجوان کھلاڑیوں کو شامل کیا گیا ہے۔