پاکستان جوجسٹو فیڈریشن کا غیرقانونی پی او اے انتخابات سے اعلان لاتعلقی

07 جولائی 2013

لاہور (کامرس رپورٹر) پاکستان جوجٹسو فیڈریشن نے غیرقانونی اولمپک اسوسی اےشن کے 5 جولائی کو اسلام آباد میں منعقدہونے والے انتخابات کے نتیجے میں مےجر جنرل (ریٹائرڈ) اکرم ساہی اور خواجہ فاروق سعید کے پاکستان اولمپک اسوسی اےشن کے عہدہ داران بننے کا دعویدار ہیں، مکمل طور پر رد کرتے ہوئے اپنی لا تعلقی کا اعلان کیا ہے۔ گذشتہ روز ایک خط کے ذریعے وزیر کھیل اور ڈی جی پاکستان سپورٹس بورڈ کو مطلع کیا ہے کہ ان جعلی انتخابات میں پاکستان جوجٹسو کی نمائندگی دو غیر مجاز افراد نے کی جن کا فیڈریشن سے کوئی تعلق نہیں ہے اور ایک فرد جس کو پاکستان کراٹے فیڈریشن اور پاکستان جوڈو فیڈریشن نے دھتکارا ہوا ہے اور جس پر جوجٹسو فیڈریشن کی جنرل کونسل نے اپنی میٹنگ جو کہ 20 جنوری 2010ءمےں ہوئی تھی مےں عمر بھر کی پابندی عائد کی تھی ۔ وہ محمود نوید کسی بھی طرح جوجٹسو کا نمائندہ نہیں بن سکتا۔ دوسرا فرد آرمی سپورٹس ڈایریکٹوریٹ کا میجر مبین شاہد تھا جبکہ حقیقت ےہ کہ پاکستان جوجٹسو فیڈریشن کی جنرل کونسل کی میٹنگ جو کہ 27 جنوری 2013ءکو منعقد ہوئی تھی، اس نے آرمی کی بنےادی ممبرشپ ختم کر دی تھی لہٰذا فیڈریشن کی نمائندگی کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ہے۔ فیڈریشن کے جنرل سیکرٹری وقار الیاس خان نے حکومت سے مطالبہ کیاہے کہ ان افراد کے خلاف کارروائی کرکے فیڈریشن کو مطلع کیا جائے وگرنہ فیڈریشن خود ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرے گی۔ سپورٹس کے حلقوں نے کہا ہے کہ اگر جعلی نمائندگی کے ذریعے میٹنگ میں ووٹ ڈالے گئے ہیں تو کس طرح ےہ انتخابات اصلی ہو سکتے ہیں؟