شیخوپورہ: آبادی کے وسط میں سلاٹر ہاوس بنانے پر حنیف پارک کے مکینوں کا احتجاج

07 جولائی 2013

شیخوپورہ (نامہ نگار خصوصی) شیخوپورہ کے گنجان آباد علاقہ حنیف پارک فیصل آباد روڈ میںآبادی کے عین وسط میں سلاٹر ہاﺅس کی تعمیر پر حنیف پارک کے سینکڑوں مکینوں نے ڈی سی او آفس کے باہر زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا، مظاہرین میں ٹی ایم اے کیخلاف بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر ان کے سلاٹر ہاﺅس کی تعمیر نامنظور وغیرہ کے نعرے درج تھے مظاہرین میں حاجی نادر ، محمد ذاکر، اللہ دتہ ڈوگر، امیر علی ، میاں دلمیر ،نیامت علی ، عمران ریاض اقبال ، افضل ، محمد اکرم ،برکت علی ،مدثر حسین نے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ ٹی ایم اے کی طرف سے حنیف پارک میں آبادی کے عین وسط میں سلاٹر ہاﺅس بنایا گیا ہے جو وہاں کی رہائشی آبادی کیلئے کسی عذاب سے کم نہ ہے مذبح خانہ کی بدبو سے تعفن اور دیگر موذی امراض پھیل رہے ہیں گندے پانی کی وجہ سے ڈینگی کی افزائش کا خطرہ ہے جو وہاں کے مکینوں کیلئے بہت بڑا خطرہ پیدا ہورہا ہے ان کا کہنا تھا کہ ہم نے سلاٹر ہاﺅس کی تعمیر کیخلاف مقامی عدالت سے بھی رجوع کیا جس پر مقامی عدالت نے ہمیں حکم امتناعی جاری کیا مگر ٹی ایم اے کے عملہ نے عدالتی احکامات کو ہوا میں اڑاتے ہوئے وہا ں سلاٹر ہاﺅس کی تعمیر کردی جس سے نہ صرف وہاں کا ماحول آلودہ ہوا ہے بلکہ بہت ساری موذی امراض بھی پھیلنا شروع ہوگئی ہیں جس کی وجہ سے بوڑھے اور بالخصوص بچے بیمار ہوکر ہسپتال کا رخ کررہے ہیں انہوںنے اربا ب اختیار سے مطالبہ کیا کہ حنیف پارک کی آبادی سے سلاٹر ہاﺅس کو باہر منتقل کیا جائے۔