انتخابات سلیکشن تھے، مقتدر قوتوں نے من پسند لوگوں کو کامیاب کرایا:رہنما بی این پی

07 جولائی 2013

کوئٹہ (ثناءنیوز) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما ملک عبدالولی نے کہا ہے کہ ہماری نظر میں حالیہ انتخابات صرف سلیکشن تھے۔ مقتدر قوتوں نے من پسند لوگوں کو انتخابات میں کامیاب کرایا اور حقیقی بلوچ نمائندوں کے مینڈیٹ کو ناکامی میں تبدیل کیا گیا تاکہ وہ پارلیمان میں اپنے حقوق کے لےے کوئی آواز نہ اٹھا سکیں۔ اس قسم کےا قدامات سے بلوچستان کے حالات کو ناگفتہ بہ بنایا جا رہا ہے اور بعض حکومتی ادارے اس تمام صورتحال کے ذمہ دار ہیں۔ مغربی نشرےاتی ادارے سے انٹروےو مےن انہوں نے کہا کہ ہ بلوچستان میں مذہبی منافرت میں اضافہ حکومتی اداروں کی بے حسی کی وجہ سے ہوا ہے اور انہی اداروں کی پالیسیوں کی وجہ سے شیعہ سنی کے درمیان نفرتیں بڑھ رہی ہیں۔ ان کے بقول بلوچستان میں کوئی مذہبی جنونیت نہیں ہے یہ سب کچھ ایجنسیوں کا پیدا کردہ ہے جو لوگ انتہا پسندی میں ملوث ہیں انہیں انہی اداروں نے پالا ہے جو اپنے آپ کو سب سے بالا تر سمجھتے ہیں اور ان لوگوں کو اپنے مقاصد کے لئے استعمال کرتے ہیں۔بلوچستان اسمبلی میں اپوزیشن رہنما مولانا عبدالواسع بھی ماضی کی طرح موجودہ بحرانو ں کا ذمہ دار مر کزی حکومت کو سمجھتے ہیں۔ ان کا خیال ہے کہ وفاقی ادارے قواعدو ضوابط کی خلاف ورزی کے مرتکب ہو رہے ہیں۔