چینی کمپنی کی نندی پور میں واپسی

07 جولائی 2013

وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی ملاقات کے بعد چین کی ڈونگ فونگ الیکٹرسٹی کمپنی نندی پور پاور پراجیکٹ پر دوبارہ کام کرنے پر رضامند ہو گی ہے۔ کمپنی نے اپنے انجینئر پاکستان بھیجنے کی ہدایت کر دی۔ نندی پور پراجیکٹ سے 450 میگا واٹ بجلی پیدا ہو گی جو توانائی کے بحران کو حل کرنے میں مدد فراہم کریگی۔ پیپلز پارٹی حکومت نے اپنے دور میں چینی کمپنی کو گارنٹی فراہم نہیں کی تھی جس کے باعث کمپنی کی کروڑوں کی مشینری کراچی میں پڑی زنگ آلود ہو گئی۔ جولائی 2011ءمیں کمپنی کے سربراہ نے صدر زرداری سے ملاقات کے دوران کہا تھا کہ منصوبے میں تاخیر سے نقصان ہو رہا ہے جبکہ اس تناسب سے لاگت بھی بڑھ جائیگی لیکن صدر صاحب نہیں مانے تھے‘ اب چونکہ وفاق اور صوبے میں مسلم لیگ کی حکومت ہے جس کے باعث سرمایہ کاروں کو گارنٹی بھی مل جائے گی اور انہیں تحفظ بھی ملے گا۔ میاں شہباز شریف انتھک محنت سے چینی کمپنی کو دوبارہ پاکستان لانے میں کامیاب ہو چکے ہیں۔ آئندہ پیر سے کمپنی کا عملہ بھی پاکستان پہنچنا شروع ہو جائیگا۔ پنجاب حکومت کا یہ انتہائی خوش آئند منصوبہ ہے اس منصوبے کی تکمیل سے توانائی کا بحران کسی حد تک کم ہو گا جبکہ توانائی کے دیگر منصوبوں پر کام کرنے کیلئے بھی کوششیں کی جائیں اور خصوصی طور پر کالا باغ ڈیم بنانے کا منصوبہ بنایا جائے کیونکہ توانائی اور پانی کے بحران کا اصل حل اس ڈیم کی تعمیر میں ہے۔