سرگودھا: ممبر قومی اسمبلی ذوالفقار بھٹی‘ بیٹے اور ساتھیوں کیخلاف انسداد دہشت گردی عدالت میں مقدمہ کی سماعت آج

Aug 07, 2018

سرگودھا(این این آئی)انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت سرگودھا آج 7 اگست کو مسلم لیگ ن کے نو منتخب ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر ذوالفقار بھٹی بیٹے اور ساتھیوں سمیت مقدمہ کی سماعت کرے گی۔زرائع کے مطابق شہر کے تھانہ کینٹ میں دہشت گردی سمیت مختلف دفعات میں عدالت عالیہ سے عبوری ضمانت کے بعد نو منتخب ایم این اے ڈاکٹر ذوالفقار علی بھٹی ان کے بیٹے ڈاکٹر بجف علی بھٹی ان کے بھائی سرور علی بھٹی اور دیگر انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش ہوئے۔ جس میں عدالت نے کیس کی تحقیقات مکمل نہ ہونے کے باعث سماعت آج تک کے لیے ملتوی کر دی ۔کینٹ پولیس کو ریکارڈ سمیت طلب کر لیا۔یاد رہے کہ تھانہ کینٹ پولیس نے 28 جولائی کو سرگودھا کے حلقہ این اے 91 سے نو منتخب ایم این اے ڈاکٹر ذوالفقار بھٹی کے الیکشن نتائج لیٹ ہونے پر آراو کے خلاف احتجاج ‘ شہریوں کو اکسانے اور توڑ پھوڑ کے الزام میں دہشت گردی سمیت مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔ مسلم لیگ ن کے نو منتخب رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر ذوالفقار علی بھٹی نے کہا ہے کہ میں نے کوئی دہشت گردی نہیں کی صرف الیکشن کا رزلٹ لینے کا مطالبہ کیا اپنے ساتھیوں کو رزلٹ لیٹ ہونے کی وجوہات بتانا میرا حق تھا ۔ ذوالفقارعلی بھٹی کی عدالت کے باہر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرے خلاف درج مقدمہ جھوٹا ہے ضمانت کرا رکھی ہے۔ پولیس کی طرف سے موقف پیش کیے جانے پر معاملہ حل ہو جائے گا۔

مزیدخبریں