زیادہ تر گائیں ذبح نہیں پلاسٹک کھانے سے مرتی ہیں 80 فیصد ”گائے رکھشک“ جرائم پیشہ ہیں: مودی بول پڑے

07 اگست 2016
زیادہ تر گائیں ذبح نہیں پلاسٹک کھانے سے مرتی ہیں 80 فیصد ”گائے رکھشک“ جرائم پیشہ ہیں: مودی بول پڑے

نئی دہلی (نیوز ڈیسک+ اے ایف پی) انتہا پسند بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو بالآخر گائے کی حفاظت کے نام پر مسلمانوں اور دلتوں کو تشدد کا نشانہ بنانے اور قتل کرنے والے ہندو غنڈ¶ں کے خلاف لب کھولنے پڑ گئے گزشتہ روز نئی دہلی میں اپنی حکومت کے 2 سال پورے ہونے کے حوالے سے تقریب سے خطاب کے دوران مودی نے کہا کہ ایسے نام نہاد گاﺅ رکھشکوں (محافظوں) میں سے 80 فیصد جرائم میں ملوث ہیں یہ لوگ دن میں گائے کے محافظ بنے پھرتے ہیں اور رات کو جرائم کرتے ہیں مجھے اس بات کا بہت غصہ ہے کہ لوگ گاﺅ رکھشا (گائے کی حفاظت) کے نام پر دکانداری کر رہے ہیں ریاستی حکومتوں کو ایسے عناصر کیخلاف سخت ایکشن لینا چاہئے انہوں نے کہا گائیں ذبح کرنے سے نہیں اکثر پلاسٹک کھا کر مر جاتی ہیں ان گائے کے محافظوں کو چاہئے کہ وہ گائے کو پلاسٹک کھانے سے بچانے کیلئے مہم چلائیں لوگوں کو خوفزدہ کرنے کا انہیں کوئی حق نہیں۔
مودی/ گائے