مسلم لیگ ن کا تحریک انصاف کے نہلے پہ دہلا

07 اگست 2016

پاکستان مسلم لیگ ن کے آٹھ ارکان اسمبلی نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی قومی اسمبلی کی رکنیت سے نا اہلی کیلئے سپیکر قومی اسمبلی کے پاس ریفرنس جمع کرا دیا۔ ان کے بقول عمران خان نے اپنی آف شور کمپنی چھپا کر 30 سال تک قوم سے جھوٹ بولا جبکہ انہوں نے الیکشن کمشن میں جو کاغذات نامزدگی داخل کرائے، اس میں اپنے اثاثے مکمل طور پر ظاہر نہیں کئے۔ ٹیکس چوری اور اثاثے چھپانے کے جرائم کا ارتکاب کرنے کے بعد وہ صادق اور امین نہیں رہے۔ تحریک انصاف اور پیپلز پارٹی کی طرف سے الیکشن کمشن میں وزیراعظم نواز شریف اور ان کے خاندان کیخلاف ریفرنسز دائر ہونے کے بعد حکومت کو مشکل صورتحال کا سامنا تھا۔ اس کے ردعمل میں حکومتی ارکان کا عمران خان کیخلاف قومی اسمبلی میں ریفرنس جمع کرانا، حکومت کو مشکل صورت حال سے نکالنے اور اپوزیشن کی احتجاجی سیاست اور تحریک کو غیر موثر بنانے کی کوشش ہے جو جارحانہ حکمت عملی کے مترادف ہے۔ بلیم گیم اور سیاسی سکورنگ کی یہ کوشش کسی کے مفاد میں نہ ہو گی۔ اس سے ملکی سیاست میںتلخی اور کشیدگی میں مزید اضافہ ہو گا۔ ملک کو دہشت گردی امن و امان غربت اور بے روزگاری کے ان گنت مسائل کا سامنا ہے۔ ان حالات میں جمہوریت کی حقیقی روح کے مطابق ملک میں تحمل و برداشت اور رواداری کی سیاست کو پروان چڑھانا اور فروغ دینا حکومت اور اپوزیشن دونوں کی ذمہ داری ہے۔ بلیم گیم کی سیاست سے گریز کیا جائے۔ ملک موجودہ حالات میں کسی محاذ آرائی کا متحمل نہیں ہو سکتا۔