سی پیک منصوبے میں نظر انداز کرنے کا الزام، خیبر پی کے کا وفاقی حکومت کیخلاف عدالت جانے کا اعلان

06 نومبر 2016 (20:07)

 خیبر پی کے نے وفاقی حکومت کے کیخلاف سی پیک منصوبے پر عدالت جانے کا اعلان کیا ہے۔ صوبائی حکومت کا الزام ہے کہ صوبے کو سی پیک منصوبے میں نظرانداز کیا جا رہا ہےکل عدالت میں رٹ دائر ہو گی ترجمان خیبر پی کے حکومت اور صوبائی وزیر مشتاق غنی نے کہا کہ وفاقی حکومت نے مغربی روٹ بنائے اور جائز حصہ دینے کا اعلان کیا تھا اب تک ایک رابطہ سڑک کے علاوہ کچھ نہیں دیا گیا۔ سی پیک میں نظرانداز کرنے پر خیبر پی کے حکومت نے عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ آج سپیکر خیبر پی کے اسمبلی وفاقی حکومت کیخلاف ہائی کورٹ میں رٹ دائر کریں گے۔ ادھر وفاقی و زیر احسن اقبال نے سی پیک پر صوبائی حکومت کے عدالت جانے کے اعلان پر ردعمل میں کہا ہے کہ سی پیک کے معاملے پر عدالت جانے کا فیصلہ خیبر پی کے کیلئے مشکلات پیدا کرے گا۔ بیرونی سرمایہ کاری عدالتوں کے ذریعے راغب نہیں ہوتی۔ مغربی روٹ پر زوروشور سے کام ہو رہا ہے۔ گوادر تا کوئٹہ شاہراہ وقت سے پہلے مکمل کر لی گئی ہے۔ عدالت جا کر خیبر پی کے حکومت کی تسلی ہوتی ہے تو انہیں روک نہیں سکتے۔ سی پیک میں کسی صوبے کے ساتھ کوئی زیادتی نہیں ہوئی۔ اقتصادی راہداری منصوبوں سے کم ترقی یافتہ علاقوں کو زیادہ فائدہ ہو گا۔ سی پیک جیسے منصوبے کو سیاسی مفادات کیلئے استعمال کرنا مناسب نہیں۔

CPEC

کچھ عرصہ پہلے یونیورسٹی آف پشاور میں قائم چائنا سٹڈی سنٹر میں ایک سیمینار ...