گڈانی شپ یارڈ : آگ میں جھلسنے والے مزید تین مزدور دم توڑ گئے، جاں بحق ہونے والے مزدوروں کی تعداد پچیس ہو گئی

06 نومبر 2016 (15:42)

گڈانی شپ یارڈ میں لگی آگ چار دن بعد ٹھنڈی ہو گئی لیکن اس کی زد میں آکر پچیس زندگیوں کے چراغ گل ہو گئے، سانحہ گڈانی کے مزید تین مریض چل بسے، دو مزدور سول ہسپتال کے برنز وارڈ میں زیر علاج تھے، عالم نامی مزدور کا انتقال ہسپتال میں ہی ہوا جبکہ حسن کو گزشتہ شام چھٹی دے دی گئی تھی جو گڈانی پہنچ کر چل بسا،ادھر عباسی شہید ہسپتال میں بھی ایک مزدور زندگی کی بازی ہار گیا۔
جاں بحق ہونے والے مزدوروں کے اہل خانہ نے میتیں مین شاہروہ پر رکھ کر شدید احتجاج کیا، انہوں نے مطالبہ کیا کہ واقعہ میں ملوث ملزمان کو کڑی سزا دی جائے، آتشزدگی کے افسوسناک واقعہ میں متاثر ہونے والے اٹھارہ سالہ غلام عباس نامی مریض اس وقت آئی سی یو میں زندگی اور موت کی جنگ لڑرہا ہے، اس کا چالیس فیصد جسم جل چکا ہے، محمد عباس بھی ہسپتال میں زیر علاج ہے،،، جسے ڈاکٹروں کی اجازت کے بعد لاہور شفٹ کیا جائے گا۔
دو نومبر کو گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں جہاز کو توڑتے وقت زور دار دھماکے کے بعد آگ لگ گئی تھی، ایم ٹی ایس ایس نامی یہ جہاز غفور اینڈ کمپنی نے خریدا تھا۔