افغانستان سے پانچ دہشتگرد پنجاب میں داخل ہونے کی اطلاع پر پنجاب بھر کی سکیورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا گیا

06 نومبر 2016 (14:36)

 پنجاب کے 15 اضلاع میں دہشتگردی کا خطرہ، پانچ دہشتگرد پنجاب میں داخل ہونے کی اطلاع پر پنجاب بھر کی سکیورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا گیا، 15 اضلاع کو کیٹگری اے بی میں رکھ کر سکیورٹی کے انتظامات فول پروف کرنے کا حکم دیا گیا ہے. وزارت داخلہ کے ذرائع کے مطابق سرگودھا سمیت پنجاب کے 10 اضلاع کو اے کیٹگری جبکہ باقی 5 کو بی کیٹگری میں رکھا گیا ہے۔سی ٹی ڈی کی کارروائی ،سہولت کار گرفتار ،دھماکہ خیز مواد برآمد، آن لائن کی رپورٹ کے مطابق جن اضلاع کو حساس قرار دیا گیا ان میں لاہور، ملتان، راولپنڈی، فیصل آباد، سرگودھا، پاکپتن، اوکاڑہ، خانیوال، وہاڑی، بہاولپور، بہاولنگر، ٹوبہ ٹیک سنگھ، خوشاب، میانوالی، مظفر گڑھ شامل ہیں۔ رپورٹس کے مطابق حساس اداروں کی طرف سے یہ بتایا گیا ہے افغانستان سے تربیت یافتہ 5 دہشتگرد پنجاب میں داخل ہوچکے ہیں، ان دہشتگردوں کی عمریں 21 سال سے 26سال کے درمیان ہیں، پانچوں دہشتگردوں کے چہرے پر ہلکی ہلکی داڑھی ہے، دہشتگردوں نے اپنے کاندھوں پر بیگ لٹکارکھے ہیں اور جوگرز پہن رکھے ہیں، ان کو بارودی مواد مقررہ پوائنٹ پر پہنچایاجائے گا۔حساس اداروں کی طرف سے اطلاعات پر آئی جی پنجاب مشتاق سکھیرا نے تمام آر پی اوز، ڈی پی اوز، ڈی آئی جی آپریشن لاہور ودیگر افسران کو سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کے احکامات جاری کئے ہیں۔ تمام گشت کرنے والی گاڑیوں کو گشت کو مزید موثر بنانے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔ پنجاب کے داخلی و خارجی راستوں اور ناکوں پر تعینات اہلکاروں کو دہشتگردی کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ہے۔، لاہور سمیت پنجاب بھر میں کومبنگ آپریشن بھی جاری ہے۔ آئی جی پنجاب کی ہدایت پر ڈی آئی جی آپریشن لاہور ڈاکٹر حیدر اشرف نے تمام ڈویڑنل ایس پیز، سرکل افسران، ایس ایچ اوز کو سختی سے احکامات جاری کئے ہیں کہ وہ دہشتگردی کے حوالے سے فول پروف انتظامات کریں۔اس ضمن میں آر پی او سرگودھا ذوالفقار حمید نے ریجن کے چاروں اضلاع کے ڈی پی او صاحبان کو اپنے اپنے اضلاع میں سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کرنے کا حکم دیا ہے، بالخصوص خیبر پختونخواسے ملنے والے سرحدی علاقے کے ساتھ ساتھ کچے کے علاقہ کے سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کرنے کا حکم دیا ہے اور رات کے اوقات میں دریائی راستوں پر بھی پولیس کی چیک پوسٹوں کے ذریعے چیکنگ کے عمل کو ضروری قرار دیا ہے، اس ضمن میں چاروں اضلاع سرگودھا، خوشاب، میانوالی اور بھکر کے تمام مین شاہرائوں پر بھی ناکے لگا کر آنے جانے والی مسافر گاڑیوں کی تلاشی اور جانچ پڑتال کا عمل بھی شروع کیا ہوا ہے اور اسی طرح کالا باغ اور چشمہ کے مقام پر بھی پولیس کو بائیو میٹرک سسٹم کے ذریعے جانچ پڑتال کے عمل کو یقینی بنانے کا بھی حکم دیا گیا ہے، گزشتہ اتوار کے روز تمام گرجا گھروں کی سکیورٹی کے ساتھ ساتھ تمام اہم سرکاری عمارتوں، رہائشگاہوں اور دفاتر کی سکیورٹی کیلئے فول پروف انتظامات کیے گئے تھے۔ جبکہ ڈی پی او سہیل چوہدری نے بھی متعدد جگہوں کی سکیورٹی کا جائزہ لیا۔