سانحہ گڈانی: مالکان کی غفلت تھی، ابتدائی انکوائری: رپورٹ ہفتہ میں دینگے: رانا تنویر

06 نومبر 2016

مریدکے/ لسبیلہ (نامہ نگار+ آن لائن+ اے ایف پی) لسبیلہ کے ڈپٹی کمشنرسید ذوالفقار ہاشمی نے چارروز قبل گڈانی کے ساحل پر جہاز میں آگ لگنے کی ابتدائی رپورٹ وزیراعلیٰ بلوچستان ثنااللہ زہری کو پیش کردی جس کے مطابق 8 افراد تاحال لاپتہ ہیں۔ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ کے مطابق دھماکے کے وقت جہاز پر 85 کے قریب مزدور کام کررہے تھے۔ تباہ ہونے والے جہاز میں امدادی کارروائیوں سے آخری مرحلے کا کام ایک سے دودن میں شروع کیا جائے گا۔ پولیس کی ایک تحقیقاتی ٹیم بھی تشکیل دی گئی ہے جو مختلف حوالوں سے اپنی تفتیش مکمل کرے گی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے سانحہ گڈانی میں 22 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔ جہاز میں دھماکہ مالکان کی غفلت کے باعث پیش آیا۔ ادھر وزیراعظم کی جانب سے وفاقی وزیر رانا تنویر کی سربراہی میں قائم تحقیقاتی ٹیم نے بھی جائے وقوعہ کا دورہ کیا اور ذمہ داران کے خلاف سخت کارروائی کی یقین دہانی کرادی ہے۔ وفاقی وزیر نے میڈیا کوبتایا کہ واقعے کی انکوائری رپورٹ ایک ہفتے کے اندر وزیراعظم کو دی جائے گی اور جہاں بھی کوتاہی نظر آئی سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ذمہ داروں کا تعین کیا جائے گا۔ پولیس تاحال جہاز کے مالک کوگرفتار نہیں کر سکی جبکہ گرفتار چار ملزمان سے تحقیقات جاری ہیں۔ گرفتار فاروق بنگالی نے تفتیش کے دوران کہا جہاز میں 24 افراد صفائی کا کام کرتے تھے جن میں سے 5 کا تعلق گڈانی سے تھا تاہم چائے کے وقفے کے باعث وہ باہر نکلے تھے کہ دھماکا ہو گیا۔ جہاز میں دو سو ٹن خام تیل جبکہ 11 سو ٹن خوردنی تیل موجود تھا کام کے دوران تیل کی پائپ لائن پر ویلڈنگ کے دوران دھماکا ہوا۔ پولیس غفور اینڈ کمپنی کے مالک غفور کو گرفتار کرنے کی کوشش کررہی ہے تاہم ان کے قریبی رشتے دار منیجر حفیظ پولیس کی حراست میں ہے۔ رانا تنویر حسین کی سربراہی میں اعلی سطحی کمیٹی نے بحری جہاز کی سائٹ کا بھی دورہ کیا اور کراچی میں پہلا اجلاس بھی منعقد کیا کمیٹی نے جہاز کے مالک، لیبر یونین کے ارکان، بلوچستان ڈویلپمنٹ، کسٹم اتھارٹی اور ماحولیاتی تحفظ کے سینئر حکام سمیت مختلف فریقوں سے تحقیقات بھی کیں۔ آخر میں رانا تنویر حسین نے اس عزم کا اعادہ کیا مستقبل میں ایسے واقعات سے بچنے کیلئے اقدامات بھی تجویز کئے جائیں گے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ غفلت کے مرتکب افراد کے خلاف سخت کارروائی ہو گی۔ گڈانی میں سرگرمیاں جلد دوبارہ شروع ہو جائیں گی۔ قلات ریجن کے کمشنر محمد ہاشم نے بتایا بحری جہاز کے آئل ٹینکر پر کام کرنے والا ٹھیکیدار کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ مزدوروں کی جانب سے ساتھیوں کے لاپتہ ہونے کے دعویٰ کے حوالے سے انہوں نے کہا ابھی تک کسی مزدور کے لاپتہ ہونے کی تصدیق نہیں ہوئی۔ دوسری طرف مریدکے کے نامہ نگار کے مطابق وفاقی وزیر رانا تنویر حسین نے کہا ہے بلاول اور عمران سیاست کے حروف ابجد سے ناواقف ہیں۔ بلاول بلوغت سے نہیں نکلے اور عمران سیاسی نابالغ ہیں۔ الیکشن 2018ءمیں ہی ہونگے۔ عدالت جو بھی فیصلہ کرے گی ہمیں قبول ہو گا مگر ضدی بچے کی طرح عمران کو قبول نہیں ہو گا۔ وہ عدالت سے بھی دہشت گردی کر رہے ہیں۔ ملک کو ترقی دینا جرم ہے تو ہم یہ جرم ہزار بار کریں گے اس امر کا اظہار رانا تنویر حسین نے ہفتہ کی شام اپنے فارم ہا¶س پر نوائے وقت سے خصوصی انٹرویو میں کیا۔ اس موقع پر صاحبزادہ حاجی محمد امجد اجمل حاجی چودھری ظہیر احمد کمبوہ، شیخ شبیر احمد و دیگر بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ دس لاکھ افراد کے اکٹھ کا دعویٰ کرنے والے چند ہزار افراد کا اکٹھ کر کے بغلیں بجا رہے ہیں۔ صرف نواز شریف کی ذات کو فوکس کر کے حکومت نہیں بلکہ وطن کے نقصان کی سازشیں عروج پر ہیں مگر خدا کی نصرت اور قوم کی دعائیں ہمارے ساتھ ہیں۔ جو اپنے گھر میں ناکام ہیں وہ ملک چلانے کے بلند و بانگ دعوے کر رہے ہیں ہم مشاورت کے قائل ہیں جبکہ عمران خان آمریت کے قائل ہیں۔
رانا تنویر