ایک تصویر ایک کہانی

06 نومبر 2016

محمد حمزہ شالیمار کا رہائشی ہے۔ 16 سال کی عمر میں مختلف گراؤنڈ اور کھیتوں سے گھاس کاٹ کر لاتا ہے اور دہلی گیٹ کے باہر فروخت کرتا ہے۔ تانگہ بان گھوڑوں کیلئے یہ گھاس خریدتے ہیں اس نے بتایا اس طرح شام کو اللہ تعالیٰ روزی دے دیتا ہے والد بھی گلی گلی گھوم کر چاول فروخت کرتا ہے گھر کے آٹھ افراد ہیں۔ مکان کا کرایہ اور بل ادا کرکے گزارہ کر رہے ہیں۔ میں غریب لوگوں کو مشورہ دوں گا کہ وہ بچوں کو تعلیم ضرور دلائیں۔ اب جب مزدوری کر رہا ہوں تو احساس ہو رہا ہے کہ اگر تعلیم حاصل کرتا تو میں بھی اچھی جگہ پر کام کرتا۔ مگر افسوس کہ غربت آڑے آگئی ہے۔ تو اسی پر اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتا ہوں۔ (فوٹو اعجاز لاہوری)