گلگت بلتستان کابینہ نے اینٹی کرپشن بل کی منظوری دے دی

06 نومبر 2016

گلگت (نامہ نگار) وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان کے زیر صدارت صوبائی کابینہ کے 6 ویں اجلاس میں سرکاری ملازمین کے فلاح و بہبود کے لئے صوبائی سطح پر فنڈ اور گروپ انشورنس کی منظوری دی گئی اجلاس میں دہشت گردی کے واقعات میں مالی نقصانات کی جانچ پڑتال کے لئے سنٹرل اسسمنٹ کمیٹی کو تمام کیسز کی جانچ پڑتال کرنے کی ہدایت کی گئی۔ حکومت صرف ایک وقت کے لئے پالیسی بنائے گی جس کے تحت تصدیق شدہ مالی نقصانات کا معاوضہ دیا جائے گا۔ گلگت بلتستان میں ٹیکنیکل ایجوکیشن اور ووکیشنل ٹریننگ ایکٹ اینٹی کرپشن بل کلیریکل سٹاف اور ٹیکنیکل سٹاف کے اپ گریڈیشن ریسکیو 1122 گلگت اور سکردو کے سکیل 1 تا 15 کے کنٹریکٹ ملازمین کی مستقلی اور پچاس فی صد سیکرٹری یونین کونسل کی سنیارٹی کی بنیاد پر اور سپروائزرز کے اپ گریڈیشن ڈاکٹروں کو اضافی مراعاتی پیکج کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں گلگت بلتستان میں پرائیویٹ سودی کاروبار کو تعزیری جرم قرار دینے کے حوالے سے قانون سازی کرنے کا بھی حتمی فیصلہ کیا گیا۔ کمشنرزکو ترقیاتی سکیموں کی منظوری کے اختیارات کے حوالے سے صوبائی وزیر منصوبہ بندی اور چیف سیکرٹری گلگت بلتستان کی سربراہی میںکمیٹی تشکیل دی گئی جو اپنی سفارشات ایک ماہ میں پیش کرے گی۔