راولپنڈی ، جنرل راحیل کے حق میں پھر بینر لگ گئے، 2018 ء کا الیکشن لڑنے کی اپیل

06 نومبر 2016

راولپنڈی (اے این این) راولپنڈی میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے حق میں نئے بینرز آویزاں کر دیئے گئے ہیں۔ یہ بینرز ایک غیرمعروف عوامی مانٹیرنگ سیل (راولپنڈی)کے ترجمان شیخ امجد علی کی جانب سے راولپنڈی کے مختلف مقامات پر لگائے گئے ہیں۔ ان بینرز میں آرمی چیف کی ریٹائرمنٹ کے بعد سیاست میں حصہ لینے میں حائل دوسالہ پابندی ختم کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ بینرز پر لکھا ہے کہ حکومتی اور اپوزیشن ارکان اسمبلی ملکی سلامتی کی خاطر انتشار کی سیاست ختم کریں، آئین میں سرکاری ملازمین کی سیاست میں حصہ لینے کی مدت 2 سال سے کم کرکے ایک سال کی جائے تاکہ 2018 کے انتخابات میں ملک کی نامور شخصیت جنرل راحیل شریف حصہ لے کر وزیراعظم بن جائیں۔ امید ہے ان کی پارٹی بھاری اکثریت سے کامیاب ہوجائے گی (ان شاء اللہ) اس طرح عسکری اور سول حکومت میں ہم آہنگی ہو گی اور ملک تیزی سے ترقی کرے گا۔ بینرز پر پاکستان پہ جان قربان اور سب سے پہلے مسلمان کے ساتھ انگریزی میں "No Extension But Deduction" کے الفاظ درج ہیں۔ ایک دلچسپ بات یہ ہے کہ ان بینرز پر آرمی چیف کی تصویر سول لباس میں دی گئی ہے اس سے قبل ان کی حمایت میں لگائے جانے والے بینرز میں جنرل راحیل شریف کی فوجی وردی میں تصویر دی جاتی رہی ہے۔ جب اس حوالے سے بینرز پر درج نمبر پر رابطہ کیا گیا تو ترجمان شیخ امجد علی نے تبصرے سے معذرت کرلی نہ ہی وہ اپنی پارٹی یا تنظیم کے حوالے سے کچھ بتانے پر راضی ہوئے۔ انہوں نے کہاکہ ابھی انھیں کسی ضروری کام سے جانا ہے، وہ پرسوں خود رابطہ کرکے تفصیلات سے آگاہ کریں گے۔ یاد رہے یہ کوئی پہلا موقع نہیں ہے جب ملک میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی حمایت میں بینرز لگائے گئے۔ اس سے قبل ایک غیر معروف سیاسی تنظیم موو آن پاکستان کی جانب سے بھی ملک کے مختلف شہروں میں اس طرح کے بینرز لگائے گئے تھے۔ شیخ امجد نے بینرز میں جنرل راحیل شریف سے 2018ء کے الیکشن میں حصہ لینے کی اپیل کی ہے۔