یونیورسٹی طلباءاور اساتذہ کو جدید ٹیکنالوجی سے آگاہ کرنے کیلئے پاکستان میں پہلا ٹائیر III ڈیٹا سنٹر قائم

06 مارچ 2017

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) ٹیک ایکسیس پاکستان اورشیندر پاکستان نے ملک کا پہلا سند یافتہ ٹائیر III ڈیٹا سنٹر قائم کیاہے جس کا مقصدیونیورسٹی کے طلباءاور اساتذہ کوجدید دور کی ٹیکنالوجی کے بارے میں آگاہ کرنا اور ملک میں ٹیکنالوجی کی ترقی کو فروغ دینا ہے۔لاہور یونیورسٹی نے یہ بین الاقوامی سند یافتہ ڈیٹا سنٹراپنایا ہے تاکہ طلباءاور اساتذہ کو ٹیکنالوجی کے مستقبل کے رجحانات کو سمجھنے اور ملک بھر میں تمام یونیورسٹی کے طلباءکو بھرپور مواقع فراہم کیا جا سکے کہ وہ ان ٹیکنالوجیز کو بہتر طریقے سے سمجھ کر استعمال کر سکیں۔ آ ج منعقدہ افتتاحی تقریب میں یونیورسٹی آف لاہو ر کے پیٹرن ایم اے رﺅف، لاہور یونیورسٹی کے چئیرمین ا ویس رﺅف، ای پی آئی کے کنٹری ہیڈ جاوید ودود، ٹیک ایکسیس پاکستان کے چیف ایگزیکٹو آفیسر محمود جبار، شیندر پاکستان کے کنٹری ہیڈ منیب خواجہ سمیت آئی ٹی انڈسٹری اور تعلیمی اداروں کے اعلی حکام نے شرکت کی۔عالمی دنیا کے ساتھ آگے بڑھتے ہوئے یونیورسٹی آف لاہور نے ٹیک ایکسیس پاکستان اورشیندر پاکستان کے تعاون سے ڈیٹا سنٹر قائم کیا۔لاہور یونیورسٹی کے 11 سے زائد لیبز، 32 محکموں، 30,000 طلباءاور 4000 اساتذہ اس سہولت سے استفادہ حاصل کر سکیں گے۔مزید یہ کہ، لاہور یونیورسٹی اس تکنیکی سہولت کو ملک کے دوسرے تعلیمی اداروں تک بھی پہنچائے گا تاکہ وہ بھی اس منفرد سہولت سے استفادہ حاصل کر سکیں۔