' مردم شماری کیخلاف نہیں پہلے افغانی ملک بدر کئے جائیں‘ اختر مینگل

06 مارچ 2017

ڈیرہ مراد جمالی ( نصیر مستوئی ) بلوچ قوم پرست رہنما سابق وزیراعلیٰ بلوچستان سردار اختر جان مینگل نے کہاکہ سامراجی قوتوں نے ستر سالوں سے تیر تلوار شیرپتلون چڈھی پگڑی اور کتاب کے نام پر عام انتخابات میں ٹھپے لگا کر جتوانے والوں نے اپنے آقاﺅں کو خوش رکھنے کےلئے بلوچستان کے مسائل اور وسائل پر قبضہ کےلئے بلوچوں کے خلاف زمین تنگ کردی ہے پاک چین اقتصادی منصوبوں اور مردم شماری سے قبل غیر اعلانیہ آپریشن کے ذریعے شہر آباد کرنے کے بجائے قبرستان آباد کیے گئے ۔ ان حالات میںمردم شماری نہیں مردہ شماری تصور کی جائے گی اس سے قبل حکمرانوں نے بلوچ عوام کو بیووف بنا رکھا تھا اب ان کو چین بیوقوف مل گیا ہے کیونکہ چائنہ پیکج بلوچستان کےلئے نہیں ہے بلکہ پنجاب کےلئے ہے نیشنل پارٹی نے بلوچوں کے خون سے ہاتھ رنگ کرکے مری معاہدوں کرکے قوم پرستی کے نام پر بلوچوں کے خلاف ہونے والے آپریشن کا برابر کا حصہ بنی تر قی کے نام پر بلوچستان میں خون کشت کی سیاست کو ترک کرنا ہو گی پٹ فیڈر کینال کھیر تھر کینال غریب عوام کےلئے نہیں بنائی گئی بلکہ ہتھیار پھینک کے آنے والوں کو نوازنے کےلئے بنائی گئی تھیں ۔ان خیالات کا اظہار ڈیرہ مراد جمالی میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا جلسہ سے عبدالولی کاکڑ سابق سینیٹر ثناءاﷲ بلوچ واجہ نذیر بلوچ میر عبدالروف مینگل میر محمد اسماعیل مینگل میر نذیراحمد کھوسہ شکیلہ بلوچ ڈاکڑ شہناز نصیر بلوچ کامریڈ غلام علی بلوچ واجہ محمد یعقوب بلوچ میر عبدالغفور مینگل سردار عمران خان بنگلزئی میر حمیداﷲ بلوچ جاوید بلوچ ماما خد ا بخش بنگلزئی میر عبدالباقی مینگل میر فاروق خان مینگل غلام مصطفی ناز مینگل اور امان اﷲ مینگل سمیت دیگر عہدیداروں نے بھی خطاب کیا سردار اختر جان مینگل نے کہاکہ بلوچستان کے عوام ایسی ترقی کو ہرگز سینہ سے نہیں لگائیں گے جو اپنی ماﺅں بہنوں بزرگوں کے خون سے لتھ پت ہوپاک چین اقتصادی راہداری منصوبے سے شہروں کو آباد کرنے کے بجائے شہر کے قبرستان بنائے جا رہے ہیںمرد شماری آباد شہروں کی ہوتی ہے ۔ہم مردم شماری کے مخالف نہیں ہیں اس سے قبل افغان مہاجرین کو ملک بدر کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ ستر برس سے حکمران نے بلوچوں پرظلم کررہے ہیں۔ تاریخ گواہ ہے بلوچوں نے اپنی عزت تمدن ننگ وناموس کی حفاظت کےلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیس کردیا لیکن اپنی دھرتی کے ایک ایک انچ کا دفاع کیا ہے۔
اختر مینگل