نوشہرہ ورکاں: پولیس اہلکار کی بارات پر نامعلوم افراد کی فائرنگ، دولہا، کار کا ڈرائیور زخمی

06 مارچ 2017

نوشہرہ ورکاں (نامہ نگار) پولیس اہلکار کی بارات پر نامعلوم افراد کا حملہ، فائرنگ سے دولہا اور اسکی گاڑی کا ڈرائیور شدید زخمی ہوگئے۔ بتایا گیا ہے سب انسپکٹر پولیس شوکت علی کا بیٹا دولہا پولیس اہلکار محمد احسان جو کیمپ جیل لاہور میں تعینات ہے، کی بارات نارووال سے نواحی گاؤں گرمولہ ورکاں جارہی تھی۔ لِیل ورکاں کے قریب موٹر سائیکل سوار دو نامعلوم مسلح افراد نے دُولہا کی کار پر فائرنگ کر دی جس سے دُولہا محمد احسان اور کار کا ڈرائیور محمد اسلم شدید زخمی ہوگئے۔ فائرنگ سے باراتیوں میں افراتفری مچ گئی اور حملہ آور فرار ہوگئے۔ اطلاع ملنے پر نوشہرہ ورکاں پولیس موقع پر پہنچ گئی اور زخمیوں کو ٹی ایچ کیو ہسپتال پہنچایا گیا جہاں سے زخمی ڈرائیور محمد اسلم کو تشویشناک حالت میں ڈسٹرکٹ ہسپتال گوجرانوالہ ریفر کردیا گیا جبکہ زخمی دُولہا کو طبی امداد اور مرہم پٹی کے بعد باراتی مسلح حصار میں اسے دُلہن کے گھر گرمولہ ورکاں لے گئے جہاں پر پولیس اور پرائیویٹ سکیورٹی میں نکاح کے بعد اسے بھی مزید علاج کیلئے ہسپتال منتقل کر دیا گیا اور دُلہن ہسپتال سے سسرال گھر روانہ ہو گئی تاہم حملہ آوروں کے بارے میں کوئی پتہ نہیں چل سکا۔ گاؤں کے لوگوں کے مطابق یہ رشتے کا تنازعہ یا دُشمنی کا نتیجہ لگتا ہے۔ پولیس نے دُولہا کے بھائی کی رپورٹ پر نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔