افغانستان میں ڈرون حملہ بمباری 3طالبان کمانڈروں سمیت 33شدت پسند ہلاک

06 مارچ 2017

کابل(آئی این پی)افغانستان میں امریکی ڈرون حملے اور ملکی فضائیہ کی کاروائی میں 3اہم طالبان کمانڈروں سمیت داعش اور طالبان کے 33شدت پسند ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے جبکہ دہشتگردوں کی 5گاڑیاں اور اسلحہ بھی تباہ کردیا گیا،شمالی صوبہ قندوز میں شدت پسندوں نے حملہ کرکے 6افغان سیکورٹی اہلکار وں کو ہلاک کردیا،طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی۔اتوار کو افغان میڈیا کے مطابق مشرقی صوبہ ننگرہار میں ڈرون حملے میںداعش کے 15جنگجو ہلاک ہوگئے ۔صوبائی گورنر کے ترجمان عطااللہ کھوگیانی نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ ڈرون طیارے نے ضلع آچن کے علاقے مہماندری میں شدت پسندوں کے ٹھکانے کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں 15جنگجو مارے گئے جبکہ شہریوں کو کوئی نقصان نہیں ہوا۔شمالی صوبہ قندوز میں ہی شدت پسندوں نے حملہ کرکے 6افغان سیکورٹی اہلکار وں کو ہلاک کردیا۔صوبائی پولیس چیف جنرل عبدالحمید نے صحافیو ںکوبتایا ہے کہ بڑی تعداد میں شدت پسندوں نے دارالحکومت کے قریب واقع ایک سیکورٹی چیک پوسٹ پر حملہ کردیا۔طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہدنے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ جنگجوﺅں نے سیکورٹی چیک پوسٹ سے اسلحہ اور دیگر سامان بھی اپنے قبضے میں لے لیا۔دریں اثناءافغان وزارت داخلہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ضلع امام صاحب میں فضائی کاروائی میں 3اہم طالبان کمانڈروں سمیت 18جنگجو ہلاک ہوگئے ۔مارے جانے والے عسکریت پسند متعد د دہشتگرد حملوں میں ملوث تھے ۔ہلاک ہونے والے طالبان کمانڈروں کی شناخت قاری مظلوم،قاری ہجران اور فاروقی کے نام سے ہوئی ہے ۔افغان فضائیہ کی کاروائی کے نتیجے میں 3جنگجو زخمی بھی ہوئے جبکہ دہشتگردوں کی 5گاڑیاں اور اسلحہ بھی تباہ کردیا گیا۔
افغانستان ہلاک