وکی لیکس نے انکشاف کیا ہے کہ صدر زرداری کو یقین تھا کہ ناصرف سپریم کورٹ میاں نواز شریف کو نااہل قراردے دے گی بلکہ چیف جسٹس آف پاکستان افتخارمحمد چوہدری بھی کبھی بحال نہیں ہوں گے

06 دسمبر 2010 (23:11)
وکی لیکس کی جانب سے جاری کردہ امریکی سفیر این ڈبلیو پیٹرسن کے ایک مراسلے میں بتایا گیا ہے صدر آصف علی زرداری کو پورا یقین تھا کہ سپریم کورٹ نوازشریف کوقومی اسمبلی کے انتخابات کے لئے نااہل قراردے دے گی اوران کی یہ پیش گوئی سترہ دن بعد ہی سچ ثابت ہوگئی۔ صدرنے ملاقات میں امریکی سفیرکو چیف جسٹس افتخارمحمد چوہدری کی بحالی روکنے کا منصوبہ بھی بتایا۔ صدرکو چیف جسٹس کے بحال نہ ہونے کا پورایقین تھا جبکہ امریکی حکومت خود بھی چیف جسٹس افتخارمحمد چوہدری کی بحالی کے خلاف تھی۔ خفیہ دستاویزات کے مطابق پی سی او عدلیہ نے جسٹس عبدالحمید ڈوگرکی سربراہی میں حکمرانوں کے اشاروں پر کام کیا۔ وکی لیکس کے مطابق صدر زرداری ججوں کی ریٹائرمنٹ کی عمربڑھانے کے لئے آئینی ترمیم لانا چاہتے تھے تاہم شہبازشریف کسی ڈیل پرراضی نہ ہوئے۔ امریکی سفیر کے مطابق صدرزرداری نے امریکی سفیر کو صاف بتا دیا تھا کہ وہ نوازشریف کے خلاف چلنے کی تیاری کررہے ہیں کیونکہ نون لیگ کے قائد نے ایٹمی سائنسدان ڈاکٹرعبدالقدیرخان کو اپنی جماعت میں شامل کرنے کا منصوبہ بنالیا ہے۔