پاکستان بمقابلہ ورلڈ الیون ، سیکورٹی وفد کی آمد کا سلسلہ شروع ہو گیا

05 ستمبر 2017

لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان اور ورلڈ الیون کے درمیان تین میچوں کی سیکورٹی کا جائزہ لینے کے لیے سیکورٹی وفد کی پاکستان آمد کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے میچز کی سیکورٹی کا جائزہ لینے کے لیے پرائیویٹ سیکورٹی ایجنسی کی خدمات حاصل کر رکھی ہیں جس کے سربراہ ریگ ڈائس ہیں۔ سیکورٹی وفد کے ارکان کے نام میڈیا سے خفیہ رکھے جا رہے ہیں تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ سیکورٹی ٹیم کے پہلے رکن اتوار کی رات ، دوسرے رکن گذشتہ روز (پیر) کی صبح لاہور پہنچے جبکہ تیسرے رکن آج بروز منگل کو لاہور پہنچیں گے۔ تین رکنی سکیورٹی وفد لاہور میں قیام کے دوران حکومتی نمائندوں کے علاوہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے آفیشلز کے ساتھ ملاقاتیں کرئے گا۔ اس موقع پر غیر ملکی سیکورٹی وفد کو حکومت پنجاب کی جانب سے میچز کی فول پروف سیکورٹی کے لیے کیے جانے والے انتظامات کے بارے میں بریف کیا جائے گا بلکہ سیکورٹی وفد کو سیف سٹی پراجیکٹ کے ہیڈ کوارٹر کا بھی دورہ کرایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیرمین نجم سیٹھی بھی پی سی بی ہیڈ کوارٹر میں سیکورٹی ٹیم کو بریفنگ دینگے جبکہ اس کے علاوہ سیکورٹی ٹیم کو قذافی سٹیڈیم اور ورلڈ الیون کے کھلاڑیوں کے ہوٹل اور ٹریولنگ روٹ کا بھی دورہ کرایا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کا دورہ کرنے والے سیکورٹی وفد وہی ہے جس نے اس سے قبل آسٹریلوی ٹیم کے دورہ بنگلہ دیش سے قبل بنگلہ دیش میں سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لیکر اپنی رپورٹ آئی سی سی کو پیش کی تھی۔